لندن(نیٹ نیوز)ہالی ووڈ میگا سٹار انجلینا جولی کی ملکیت رہنے والی مشرق وسطیٰ کے ملک مراکش کی تاریخی مسجد ’مسجد کتبیہ‘ کی نایاب پینٹنگ ریکارڈ قیمت میں فروخت ہوگئی۔خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق مذکورہ تاریخی پینٹنگ کو لندن کے پینٹنگز نیلام گھر کرسٹیز میں فروخت کیا گیا ،پینٹنگ سے متعلق خیال کیا جا رہا تھا کہ وہ 35 لاکھ امریکی ڈالر تک کی رقم میں فروخت ہوگی مگر وہ ایک کروڑ 15 لاکھ امریکی ڈالر میں فروخت ہوگئی۔’مسجد کتبیہ‘ کی مذکورہ پینٹنگ برطانیہ کے سابق وزیر اعظم ونسٹن چرچل کی تخلیق کردہ ہے اور مذکورہ پینٹنگ کو ان کی جانب سے بنائی گئی آخری پینٹنگ بھی کہا جاتا ہے ۔ونسٹن چرچل کی مذکورہ پینٹنگ کو ’ٹاور آف کتبیہ مسجد‘ بھی کہا جاتا ہے ، جس کے پس منظر میں کوہ اطلس بھی دکھائی دیتے ہیں۔کوہ اطلس بلند و بالا پہاڑوں کا وہ سلسلہ ہے جو مراکش، الجزائر اور تیونس تک پھیلا ہوا ہے ۔مراکش شہر میں ہی 12 ویں صدی کی قدیم ’مسجد کتبیہ‘ بھی موجود ہے ، جسے ونسٹن چرچل نے اپنی پینٹنگ میں قید کیا تھا۔ونسٹن چرچل نے مذکورہ پینٹنگ 1939 سے 1945 کے درمیان بنائی تھی اور انہیں ’مسجد کتبیہ‘ کی پینٹنگ بنانے کا خیال مراکش کے دورے کے دوران آیا تھا۔مذکورہ پینٹنگ 2011 میں انجلینا جولی اور اس وقت ان کے شوہر براڈ پٹ کے پاس آئی تھی۔