لاہور( نمائندہ خصوصی سے )ریسکیو 1122 کو خود مختار ادارہ بنا دیا گیا،پنجاب اسمبلی میں پنجاب ایمرجنسی سروس ترمیمی بل 2021 ،پنجاب ٹرانسپیرنسی رائٹس انفارمیشن اور ٹائم انسٹیٹیوٹ ملتان کے ترمیمی بل بھی کثرت رائے سے منظور کر لئے جبکہ لیگی رکن رانا منور حسین نے سرگودھا میں پتھروں کی کٹائی کے ٹھیکے من پسند افراد کو دینے پر احتجاج بھی کیا۔پنجاب اسمبلی کا اجلاس سپیکر چودھری پرویز الہی کی زیر صدارت ایک گھنٹہ 38 منٹ تاخیر سے شروع ہوا۔وقفہ سوالات کے دوران لیگی رکن رانا منور حسین نے ایک ضمنی سوال کرتے ہوئے کہا سرگودھا میں پہاڑوں کی کٹائی کے ٹھیکے من پسند افراد کو وہ بھی بغیر بولی کے دیے گئے ہیں۔ان ٹھیکے داروں کو کوئی پوچھنے والا نہیں ۔اس کے جواب میں صوبائی وزیر عمار یاسر نے کہااس نشاندہی کریں ہم نوٹس لیں گے ۔بعدازاں سپیکر نے ارکان کو غیر سرکاری بل پیش کرنے کا کہا جس پر (ق) لیگ کی رکن خدیجہ عمر نے ریسکیو ایمر جنسی ترمیمی بل 2021ایوان میں پیش کیا جس کی اپوزیشن اور حکومت کی جانب سے کوئی مخالف نہ کی گئی۔ جبکہ وزیر قانون راجہ بشارت سے سپیکر نے پوچھا آپ اس بل کی مخالفت کرنا چاہتے ہیں یا کچھ کہنا چاہتے ہیں تو راجہ بشارت خاموشی سے اپنی نشست پر بیٹھے رہے ۔ سپیکر نے بل پر ایوان سے رائے لی اور بل کثرت رائے سے منظور ہوگیا۔بعدازاں میاں شفیع نے پنجاب ٹرانسپرنسی رائٹس اور صاحبزادہ قسیم نے ٹائمز انسٹیٹیوٹ ملتان کے ترمیمی بلز ایوان میں پیش کیے جو کثرت سے منظور کرلیے گئے ۔بعدازراں حکومتی رکن خاتون شمیم آفتاب نے پانچ سال سے سولہ تک کی عمر کے بچوں کی لازمی کی پالیسی جلد از جلد مرتب کرنے کی سفارش وفاقی حکومت سے کرنے کی قرارداد اور گریجوایٹ انگلش ٹیچرز کے 2004کے سروس رولز پر عملدرآمد کو یقینی بناتے ہوئے گریڈ 16میں ترقی دینے کے لئے اقدامات کرنے کی قرارداد ایوان نے متفقہ طور پر منظور کرلی۔ایجنڈا مکمل ہونے پر سپیکر نے اجلاس جمعے کی صبح نو بجے تک ملتوی کردیا۔دریں اثنا بل کے تحت ڈی جی ریسکیو 1122 کو صوبائی سیکرٹری کے اختیارات مل گئے ۔بل منظوری کے تحت ڈویژن اور ضلعی سطح پر ایمرجنسی افسر تعینات کیے جائیں گے جو ڈویژن کی سطح پر ڈویژنل آفیسرز کہلائیں گے ۔ ایمرجنسی آفیسرز کو اگلے گریڈ میں ترقی کا فیصلہ سیکشن کمیٹی کے اختیار میں ہوگا۔ ترقی کیلئے پروموشن کورس اور فزیکل فٹنس لازم قرار دی گئی ہے ۔ پنجاب ایمرجنسی کونسل کا اجلاس وزیر قانون طلب کر سکے گا اور ادارے میں ملازمین کیلئے بہتر مستقبل کے اقدامات ہوسکیں گے ۔سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے کہا کہ یہ ادارہ الحمد للّٰہ میرے ہاتھوں سے بنا ،آج اس ادارے کو مزید بہتر بنانے کیے لئے قانون سازی کا موقع دیا،ریسکیو 1122 کا ادارہ اب مزید پھلے پھولے گا۔