BN

ارشاد احمد عارف


خط لکھیں گے گرچہ مطلب کچھ نہ ہو


بیرسٹر شہزاداکبر کی پریس کانفرنس سن کر شاعر یاد آیا: ؎ خط لکھیں گے گرچہ مطلب کچھ نہ ہو ہم تو عاشق ہیں تمہارے نام کے میاں نواز شریف مفرور ہیں یا اشتہاری یہ حکومت بہتر جانتی ہے یا قانون دان بتا سکتے ہیں لیکن ان کی واپسی کے لئے حکومتی کوششیں تعجب انگیز ہیں‘ میاں نواز شریف ضمانت پر رہا ہوئے اور پھر میاں شہباز شریف کی شخصی ضمانت پربیرون ملک چلے گئے۔ اہل وطن اور حکمرانوں نے سکھ کا سانس لیا‘ ایک سابق حکمران اور پنجاب کے مقبول لیڈر کی بیرون ملک روانگی اور طویل
اتوار 23  اگست 2020ء

’’عرب صاحب‘‘

جمعرات 20  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
پاک سعودی تعلقات میں مدوجزر نئی بات نہیں‘ اطمینان بخش بات یہ ہے کہ یہ مدوجزر دوررس تلخی کا موجب کبھی نہیں بنا‘ پاکستان کی سول و فوجی قیادت کو اپنی مجبوریوں کا احساس رہا تو سعودی قیادت نے بھی یہ بات کبھی فراموش نہ کی کہ پاکستان عالم اسلام کا بازوئے شمشیر زن ہے‘ حرمین شریفین کی حفاظت کا فریضہ خلوص قلب اور انشراح صدر کے ساتھ صرف پاکستان سرانجام دینے کی پوزیشن میں ہے اور خطے میں پاکستان کی سٹریٹجک پوزیشن دیگر مسلم ممالک کی طرح سعودی عرب کے لئے باعث تقویت۔شاہ محمود قریشی کے ایک ٹی وی
مزید پڑھیے


بقا کی فکر کرو خود ہی زندگی کے لئے

منگل 18  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
چین امریکہ کشمکش نے پاکستان کو دو راہے پر لاکھڑا کیا ہے‘ چین امریکہ کشمکش کی کئی جہتیں ہیں‘چین نے بھارت کی براستہ کشمیر لداخ میں پیش قدمی روک دی اور وادی گلوان میں اپنی حدود میں رہنے پر مجبور کیا ‘نریندر مودی کا اگر یہ خیال تھا کہ چین بھارت تنازعہ میں امریکہ اس کا ساتھ دیگا تو یہ غلط فہمی دور ہو چکی‘امریکہ نے اس موقع پر خاموشی کو ترجیح دی اور بھارت کو تھپکی دینے سے احتراز برتا‘ اس تنازعہ سے پاکستان کی حوصلہ افزائی ہوئی‘ مقبوضہ جموں و کشمیر سے بھی آگے بڑھ کر آزاد کشمیر
مزید پڑھیے


اُصول حکمرانی

اتوار 16  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
امیر تیمور گرگانی کی شہرت ایک تُنک مزاج‘ ترش رو‘ سخت گیر اور ظالم انسان کی ہے‘ ایک حد تک یہ درست بھی ہے لیکن تزک تیموری میں اس کی دور اندیشی‘ دانائی‘ رعایا پروری کا تاثر نمایاں ہے‘ اہل علم و دانش‘ تاجروں ‘ اہل صنعت و حرفہ ‘ شاعروں کے قدر دان اس شخص نے حکمرانی کے لئے صدیوں قبل جو اُصول وضع کئے وہ اب بھی قابل غور اور لائق تقلید ہیں۔ تیمور لکھتا ہے…: ’’میں نے امور ملک گیری و حکمرانی اور دشمن کی شکست اور دشمن کو اپنے دام میں لا کر مخالفوں کو دوست بنا
مزید پڑھیے


بنا ہے عیش تجمل حسین خاں کے لئے

جمعرات 13  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
لاہور کے ہر باخبر اخبار نویس کو علم تھا کہ 11اگست کو پیشی پر مریم نواز شریف ہجوم کے ساتھ نیب آفس کا رخ کرینگی اور مسلم لیگ(ن) کے کارکن اس موقع کو یاد گار بنانے کی کوشش کریں گے۔1997ء میں میاں نواز شریف نے پیشیوں سے تنگ آ کر اپنے لاہوری کارکنوں کو سپریم کورٹ پر دھاوا بولنے کی ترغیب دی‘ مرکز اور صوبے میں حکومت تھی‘ سرکاری وسائل دسترس میں اور پولیس و انتظامیہ کا تحفظ حاصل‘چنانچہ کارکنوں کا ایک جتھہ ارکان اسمبلی کی قیادت میں اسلام آباد پہنچا‘ پنجاب ہائوس میں ٹھہرا اور وقت مقررہ پر عدالت
مزید پڑھیے



موسم اچھا‘ پانی وافر‘ مٹی بھی زرخیز

منگل 11  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
چالیس سال قبل لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل درویش صفت میجر جنرل (ر) محمد حسین انصاری نے سرکاری زمین پر قابض نرسری مالکان کو بے دخل کر کے اپر مال سے ٹھوکر نیاز بیگ تک نہر کنارے درخت لگانے کا آغاز کیا تو اس وقت کے گورنر لیفٹیننٹ جنرل غلام جیلانی خان نے انہیں بُلایا اور پوچھا کہ وہ نہر کے دونوں طرف کس قسم کے درخت لگا رہے ہیں‘ انصاری صاحب نے بتایا کہ انہوں نے جامن‘شیشم‘ نیم‘ پیپل اور اس نوعیت کے دیسی درخت لگانے کا فیصلہ کیا ہے‘ غلام جیلانی خان جو خود بھی سبزے کے
مزید پڑھیے


تلخ سچائی

جمعه 07  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
شاہ محمود قریشی اپنی جگہ سچے ہیں ملائشیا کانفرنس کے موقع پر ہمارے دیرینہ دوست سعودی عرب نے پاکستان کو بلیک میل کیا‘عمران خان کو کانفرنس میں شرکت کا مزہ چکھانے کے لئے لاکھوں پاکستانیوں کی ملک بدری اور معاشی مفادات کو نقصان پہنچانے کی دھمکی دی گئی‘ مہاتیر محمد خاموش رہے مگر طیب اردوان نے محتاط الفاظ میں برادر ملک کے ’’حسن سلوک‘‘ کا تذکرہ کیا لیکن ردعمل ظاہر کرنے کا یہ کون سا موقع ہے؟ یہ کانفرنس عربوں کے خلاف منعقد کی جا رہی تھی نہ اس کے مقاصد میں مسلمانوں کے اتحاد کو نقصان پہنچانے کا نکتہ
مزید پڑھیے


کب اشک بہانے سے کٹی ہے شب ہجراں

جمعرات 06  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
قوم نے یوم استحصال کشمیر منا لیا‘ حکومت نے جرأت کی‘ پاکستان کا حتمی سیاسی نقشہ پیش کردیا جس کے مطابق مقبوضہ کشمیر‘ لداخ اور جموں پاکستان کا حصہ ہیں۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا دعویٰ ہے کہ بھارت نے مختلف اطراف سے پاکستان کو مذاکرات کی پیشکش کی‘ یہ سنجیدہ پیشکش تھی مگر پاکستان نے 5 اگست کے یکطرفہ اقدام کی واپسی تک مذاکرات کی میز پر بیٹھنے سے انکار کردیا‘لیکن؟کشمیری عوام بھارتی محاصرے سے آزاد ہوئے نہ شہادتوں اور گرفتاریوں میں کمی آئی اور نہ نام نہاد عالمی برادری کے دبائو پر ایک سال سے اپنے گھروں
مزید پڑھیے


لفظ کچھ دائیں بائیں کرتا ہے

منگل 04  اگست 2020ء
ارشاد احمد عارف
سوچا عید کے چوتھے روز قارئین کے ذوق اور ذائقے کو سیاسی موضوعات سے بوجھل کرنے سے بہتر ہے کہ علمی و ادبی لطائف سے محظوظ کیا جائے سو پڑھیے اور لطف اٹھائیے۔ ٭۔سرسید احمد خان ٹرین میں سفر کر رہے تھے کہ ان کے ڈبے میں ایک انگریز آ کر بیٹھ گیا۔ کچھ دیر بعد انہیں بھوک محسوس ہوئی تو انہوں نے اپنا ناشتہ دان کھول کر رکھا اور ہاتھ دھونے کے لئے غسلخانہ میں چلے گئے‘ لوٹ کر آپ نے ناشتہ دان غائب پایا۔ دراصل انگریز نے ان کی غیر حاضری میں ناشتہ دان چلتی گاڑی سے باہر پھینک دیا
مزید پڑھیے


جو تری بزم سے نکلا سو پریشاں نکلا

جمعه 31 جولائی 2020ء
ارشاد احمد عارف
ظفر مرزا اور تانیہ ایدروس کے استعفے دونوں معاونین خصوصی کی دوہری شہریت کا شاخسانہ ہیں یا مالی معاملات میں گڑ بڑ کا نتیجہ؟فی الحال وثوق سے کچھ کہنا مشکل ہے‘ البتہ عوامی تنقید اور دبائو پر استعفیٰ کی روایت پاکستانی سیاست میں ایک نئی روایت ہے۔ کہنے کو یہ بھی کہا جا سکتا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے دونوں کو معاونین خصوصی کا منصب سونپتے وقت دوہری شہریت کے مضمرات پر غور کیوں نہ کیا؟ آخر اپنی ٹیم کے ارکان کا انتخاب کرنے سے پہلے مناسب چھان پھٹک اور خوب غورو خوض کی ضرورت کیوں محسوس نہیں
مزید پڑھیے