BN

سعدیہ قریشی


خوشامد کی سائونڈ پروف دیواریں


نومبر کی پہلی تاریخ اور پہلا اتوار‘ عزیزوں کی ایک شادی میں شرکت کی۔ راولپنڈی کے عسکری کلب میں ولیمہ کی تقریب تھی۔ اس وقت کورونا دوبارہ سے پھیلنے کی خبریں آ رہی تھیں۔ ہم نے حفظ ماتقدم کے طور پر اپنے ساتھ ماسک رکھ لیے تھ۔ خیر اب ماسک تو گھر سے باہر نکلتے ہوئے ایک ضروری چیز ہو گئے ہیں۔ اوپن ایئر میں کینوپی کا بندوبست تھا۔ مہمانوں کے لیے میزیں بھی فاصلے پر لگائی گئی تھیں۔ جگہ کے اعتبار سے مہمانوں کی تعداد بھی کم رکھی گئی تھی مگر شادی کی بھرپور تیاری کے ساتھ ماسک لگانے کا
بدھ 11 نومبر 2020ء

’’ہی از ناٹ ڈونلڈ ٹرمپ‘‘

اتوار 08 نومبر 2020ء
سعدیہ قریشی
گزشتہ چار سال میں دنیا نے ٹرمپ کی صورت میں ایک بڑبولا کچھ کچھ خبطی اور بظاہر من موجی جو جی میں آئے ٹویٹ کرنے والا امریکی صدر بھگتا ہے۔ جس نے امریکہ کو جوڑنے سے زیادہ تقسیم کیا ہے ۔اس وقت صدارتی الیکشن کی دوڑ میں جوبائیڈن ‘ وکٹری پوائنٹ کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ صورت حال واضح ہو رہی ہے کہ وائٹ ہائوس کا نیا مکین ڈیمو کریٹس کا امیدوار جوبائیڈن ہو گا۔ ڈونلڈ ٹرمپ کو چونکہ دنیا بھگت چکی ہے سو اس بار دلچسپی اور توجہ کا مرکز بائیڈن کی ذات ہے۔ وائٹ ہائوس کے نئے مکین بائیڈن
مزید پڑھیے


مڑ بوٹی دا قیمہ۔۔۔

جمعه 06 نومبر 2020ء
سعدیہ قریشی
ممتاز شاعر انور مسعود مزاح کے پیرائے میں جو جاندار تبصرہ اور تجزیہ ہمارے سماج سیاست اور انسانی نفسیات کا کرتے ہیں وہ انہی کا خاصہ ہے مزاح سے شروع ہونے والی نظم بسا اوقات ایسی تلخ حقیقت پر اختتام پذیر ہوتی ہے کہ قاری پڑھتے پڑھتے سنجیدہ اور کبھی رنجیدہ ہو جاتا ہے۔مزاح میں فکر انگیز بات کہنے کا ہنرصرف انور مسعود صاحب کو آتا ہے ہے اسی لیے بہت سے لوگوں کی طرح میرے بھی پسندیدہ شاعر ہیں۔انور مسعود صاحب کے ساتھ مجھے کچھ مشاعرے بھی پڑھنے کا اعزاز حاصل ہوا۔ایک تو شاعری کمال اور
مزید پڑھیے


کیسے تھے محمد صلی اللہ علیہ و سلم؟

اتوار 01 نومبر 2020ء
سعدیہ قریشی
ہر سال ربیع الاول کے موقع پر سیرت النبی کانفرنس منعقد ہوتی ہے ، سیرت النبی پر لکھی ہوئی کتابوں کو انعامات دیے جاتے ہیں۔اس سال جس کتاب کو سیرت النبی کے حوالے سے پہلے انعام کا حقدار ٹھہرایا گیا وہ نصرت محمود قریشی کی لکھی ہوئی ہے۔میری خوش قسمتی کہ نصرت محمود سے مل چکی ہوں میری دوست فرح ہاشمی نے مجھے ان سے ملوایا ۔ گزشتہ برس یہ کتاب منظر عام پر آئی ،کتاب کی رونمائی کی تقریب میں مجھے بات کرنے کے لیے مدعو کیا گیا تھا میں نے عرض کی کہ میں بغیر پڑھے کتاب پر
مزید پڑھیے


نبی پاکؐ سے محبت تہواری نہیں ہے

جمعه 30 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی
سرکارِ دو عالم سے محبت کو ہم نے تہواری بنا دیا ہے۔کیا عشق رسول ﷺ کوئی تہوار ہے کہ اسے فیسٹول کی طرح منایا جائے۔ اب تو حکومت وقت نے بھی ہفتہ عشق رسول ﷺ منانے کا اعلان کر دیا ہے۔ یعنی ہم پورا ہفتہ عشق رسول ﷺ منائیں گے اور پھر اس کے بعد۔؟ آج عید میلادالنبی ؐ ہے۔ بے شک اس دن سے حسین ترین دن اس کائنات میں اور کوئی نہیں۔ اس روز خالقِ کائنات نے اس ہستی کو زمین پر رونق افروز کیا جس کے لئے یہ کائنات روزِ اول سے سجائی گئی تھی۔ نبی پاک ﷺ سے
مزید پڑھیے



چائے کے کپ میں لہو گھل گیا…!!

بدھ 28 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی
کل ستائیس اکتوبر کی صبح خوشگوار تھی۔ دانیال کا آج سکول ڈے تھا۔ کورونا کے بعد سکولوں کی روٹین بدل چکی ہے۔ بچے ہفتے میں دو یا تین دن اپنے تعلیمی اداروں میں جاتے ہیں۔جس روز ہمارا ننھا طالب علم سکول جاتا ہے۔ اس صبح گھر بہت پیاری سرگرمی سے بھر جاتی ہے۔ یونیفارم، ناشتہ، فیورٹ لنچ باکس کی تیاری، پانی کی بوتل، بستے میں کتابیں جومیٹری اور دیگر ضروری اشیاء کو ایک بار پھر ری چیک کرنا اور ساتھ ہی ساتھ دل میں دعائیں پڑھتے جانا۔ کورونا کے بعد جب بچے سکولوں، مدرسوں میں جاتے ہیں تو وہمی مائوں
مزید پڑھیے


ہمارے پاس سرسیدؒ کو یاد کرنے کی فرصت نہیں

جمعه 23 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی
سیاست کا ہنگام عروج پر ہے ،ہمارے ہاں سنسنی خیز حالات و واقعات کا تسلسل ہے۔ لیکن سماجی سطح پر بھی توجہ کھینچ لینے والے حادثات سانحے اور واقعے ظہور پذیر ہوتے رہتے ہیں۔اس پر غضب یہ کہ ہمارے شب و روز سوشل میڈیا کے کھونٹے سے بندھے ہیں۔ جہاں سطحیت فروغ پاتی ہے‘خود نمائشی اور ستائش باہمی کے آئینے میں ہم ہمہ وقت خود کو دیکھے سراہے جانا پسند کرتے ہیں۔ تو پھر ایسے میں ہمیں سرسید کہاں یاد رہتے۔!17اکتوبر کو اس نابغہ روزگار شخصیت کا یوم پیدائش،آیا اور گزر گیا۔ ہمیں کیوں کر خیال آتا کہ تحریک علی گڑھ
مزید پڑھیے


سہولت بازار‘ لیڈی ہیلتھ ورکرز اور حفیظ سنٹر

جمعرات 22 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی

لیجئے عوام کی سہولت اور آسودگی کے لیے حکومت نے سہولت بازار کھولنے کا اعلان کیا ہے۔ سہولت بازار‘ ریلیف بازار‘ سستے بازار‘ رمضان بازار بھی دراصل حکمرانوں کا ایک سیاسی سٹنٹ ہوتا ہے جو عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے اور سیاسی پوائنٹ سکورنگ کے لیے کیا جاتا ہے۔

ہمارے وسیم اکرم پلس وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار فرماتے ہیں کہ مصنوعی مہنگائی کو ہرگز برداشت نہیں کریں گے۔ اس بیان سے تویوں لگتا ہے کہ اصلی تے سچی مہنگائی برداشت کرلیں گے لیکن مصنوعی مہنگائی برداشت نہیں کریں گے۔

اصلی مہنگائی وہ ہے جو آئی ایم ایف کی عوام دشمن معاشی
مزید پڑھیے


اصل سوال یہ ہے

جمعه 16 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی
سات اکتوبر 2020ء کو ایک خاتون ملزم کی شناخت کے لیے کیمپ جیل پہنچی تو جیل کے دو تین اعلی افسران کے علاوہ کسی کو خبر نہیں تھی کہ یہ موٹروے پر ھونے والے ہائی پروفائل گینگ ریپ کی ستم رسیدہ خاتون ہیں ۔شناخت پریڈ کے لیے ایک جیسی قدوقامت اور عمروں کے دس ملزمان کو قطار میں کھڑا کیا گیا، ان میں گینگ ریپ کا شریک ملزم شفقت بھی موجود تھا،خاتون نے اسے دیکھتے ہی پہچان لیا۔ڈی آئی جی پولیس اور متعلقہ سول جج اس موقع پر موجود تھے عموما ایسے کیسز میں انسپکٹر
مزید پڑھیے


پنک ربن:۔کمپین کے نام پر کاروباری سرگرمی…(آخری حصہ)

بدھ 14 اکتوبر 2020ء
سعدیہ قریشی
پنک ربن کمپین کے پس پردہ مقاصد کو بے نقاب کرنے والی، میڈیکل سوشیالوجسٹ گیل سولک (gayle sulik)اپنی کتاب پنک ربن بلیوز میں لکھتی ہیں کہ یہ جاننے کے کہ کیا واقعی پنک ربن کمپین کا کینسر کی آگاہی سے زیادہ منافع کمانے سے تعلق ہے، اس نے اکتوبر کے مہینے میں بڑے بڑے شاپننگ مالز میں خواتین سے متعلقہ اشیاء کے سٹوروں کا دورہ کیا۔ وہاں تمام اشیاء گلابی رنگ میں بیچی جا رہی تھیں۔ دکانوں اور سٹوروں کی تزئین و آرائش گلابی رنگ میں کی گئی تھی۔ وہ اشیاء بھی پنک ربن کے لوگو کے ساتھ بیچی جا
مزید پڑھیے