مکرمی !اقوامِ متحدہ کی عالمِ اسلام کے حقوق کے لیے سرد مہری اور ٹال مٹول سے کام لینا یہ ثابت کرتا ہے کہ یہود و نصارٰی اور ہندو بنیا سب ایک ہی شاخ کے اُلو ہیں اور پُوری دنیا میں دہشتگردی،انتہا پسندی اور اسلام مخالف سازشوں میں ان تمام کا مرکزی کردار ہے ۔کشمیر،فلسطین ،میانمر اور شام میں جو دل دہلا دینے والے مظالم مسلمانوں پہ ڈھائے جا رہے ہیں یہ سب مسلم ممالک کے اتحاد کے فقدان کا منہ بولتا ثبوت ہیں ۔اب جبکہ مودی سرکارنے کشمیر کے مسلمانوں پہ جو قیامت خیز مظالم کا متشدد اور نہایت ہی شرمناک اورانسانیت سوز سلسلہ شروع کیا ہے یہ بذاتِ خود بھارت کی جمہوریت اور اقوامِ متحدہ کے منہ پہ ایک سیاہ داغ اور طمانچہ ہے ۔اگر اب بھی تمام مسلم ممالک باطل کی اس جنگ کے خلاف متحدہ نہیں ہوتے تو یہ ڈوب کر مر جانے کا مقام ہے ۔اس میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان کشمیر کی مکمل حمایت کر رہا ہے کیونکہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے۔ اب امتِ مسلمہ کو بیدار ہونے کی ضرورت ہے اور بہادر مسلمان ہیروز کے نقشِ قدم پہ چلنے کی ضرورت ہے۔ (عمران خان بوڑانہ،تحصیل نور پور،ضلع خوشاب)