لاہور (خبرنگارخصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے محکمہ انٹی کرپشن کے ملازم کی درخواست ضمانت پر سماعت کرتے ہوئے اعجاز شاہ ڈی جی انٹی کرپشن کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس محمد قاسم خان نے فاروق کی درخواست پر سماعت کی درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ پنجاب پولیس کے ہیڈ کانسٹیبل غلام جعفر کو رشوت لیتے رنگے ہاتھوں پکڑا،پولیس نے ساز باز ہوکر مجھ پر منشیات کا مقدمہ درج کرلیا، ڈائریکٹر سرگودھا ریجن کو بھی صورتحال سے آگاہ کیا،کوئی شنوائی نہیں ہوئی درخواست گزار کی جانب سے یہ بھی بتایا گیاکہ اس صورتحال کے باوجود بھی درخواستگزار کیخلاف ہی کارروائی کی جارہی ہے ، کرپٹ اہلکار کیخلاف کارروائی کرنے پر مجھے جیل ڈال دیا گیا، عدالت درخواست ضمانت منظور کرکے رہا کرنے کا حکم دے عدالت نے درخواست سماعت کیلئے منظور کرتے ہوئے اعجاز شاہ ڈی جی انٹی کرپشن کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔