واشنگٹن( ندیم منظور سلہری سے ) امریکہ نے طالبان سے افغانستان سے مکمل انخلا کیلئے 3سال کا وقت مانگ لیا لیکن طالبان 3 سے 6 ماہ میں افواج کا انخلاء چاہتے ہیں ۔ذرائع ابلاغ کے مطابق صدر ٹرمپ کی کوشش ہے2020 کے صدارتی الیکشن سے پہلے فوجیوں کی کچھ تعداد کو واپس بلا لیا جائے اور باقی کو مرحلہ وار بلایا جائے اس عرصہ کے دوران طالبان کے ساتھ لانگ ٹرم معاہدہ ہو جائے تاکہ وہ الیکشن میں یہ دعویٰ کرنے میں حق بجانب ہوں کہ انہوں نے عوام سے جو وعدے کئے تھے وہ پورے ہوئے ۔ امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ جو سوچ رہے ہیں اس کی تکمیل اتنی آسان نہیں ہے ۔ ضروری نہیں کہ اُنکے کہنے پر سب متفق ہو جائیں۔ افغانستان اور فلسطین میں امریکی پالیسیاں ناکامیوں کا شکار اس وجہ سے ہیں کہ امریکہ نے فریقین میں اعتماد پیدا کرنے میں غیرجانبداری کا مظاہرہ نہیں کیا ۔صدر ٹرمپ ٹوئٹر پر اپنی پالیسیوں کا اعلان کر دیتے ہیں وہ واحد صدر ہیں جن کی روزانہ کی بنیاد پر پالیسیاں بنتی اور ختم ہوتی ہیں۔ دنیا اب امریکہ کیساتھ لانگ ٹرم معاہدوں پر تحفظات کا شکار ہے صدر کا یہ وطیرہ امریکی ساکھ کو بُری طرح متاثر کر رہا ہے ۔