لاہور(سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہاہے کہ چین میں وزیراعظم کا 500 کرپٹ لوگوں کو پکڑنے میں بے بسی کا بیان اس بات کا اظہار ہے کہ میں بے اختیار ہوں اور میں کرپشن کے خلاف کچھ نہیں کر سکتا ۔انہوں نے کہا قوم کارخانے چاہتی ہے جبکہ حکومت لنگر خانے بنانے میں لگی ہوئی ہے کشمیری ہماری طرف دیکھ رہے ہیں، ان خیالات کااظہار انہوں نے پھالیہ میں کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر سینکڑوں لوگوں نے مختلف سیاسی جماعتوں کو چھوڑ کر جماعت اسلامی میں شمولیت کا اعلان کیا ۔تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا حکومت لوگوں کو این جی اوز کا محتاج نہ بنائے ہم دوسروں کو کھلانا اور دنیا کی قیادت کرنا چاہتے ہیں ،کشمیری 66 دنوں سے تڑپ رہے اور پاکستان کی طرف دیکھ رہے ہیں ، حکمران ہر روز مدرسوں کو ٹھیک کرنے کی باتیں کر تے ہیں میں کہتاہوں کہ پہلے معیشت ، صنعت، زراعت ، عدالتوں اور ہسپتالوں کو ٹھیک کریں تاکہ عوام کی پریشانی میں کمی ہو ۔ آج صورتحال یہ ہے کہ خطے کے بھوٹان ، سری لنکا اور نیپال جیسے چھوٹے ملک بھی معیشت کے میدان میں پاکستان سے آگے نکل گئے ہیں ،بنگلہ دیش کا ٹکہ بھی اب ہمارے روپے کو ٹکے ٹکے کی باتیں سنا رہاہے ۔