نئی دہلی،نیویارک(نیوزایجنسیاں)بھارت میں لوگوں کو اندھیرے میں رکھ کر کورونا کی ویکسین کے تجربہ کے نتیجہ میں ایک شخص ہلاک ہوگیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق ملک میں تیار کی جانیوالے کوویکسین کے بھوپال شہر میں لوگوں پر تجربے کے دوران ایک شہری کی موت ہوئی جس کے بعد متعدد سماجی تنظیموں نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ کر تجربات کو فوری بند کرانے اور ذمہ دار افراد کو سزا دلانے کا مطالبہ کیا ۔خط میں مزید کہاگیاکہ کمزور اور پسماندہ افراد کو گمراہ کیا جارہا اور تجربات کیلئے جانوروں کی طرح استعمال کیا جارہا ۔ ویکسین کاٹیکہ لگوانے کے بدلے میں 750روپے دیئے گئے ،پورے معاملے کی آزادانہ انکوائری کرائی جائے ۔علاوہ ازیں امریکہ کے بعد کورونا کی وبا سے دوسرے سب سے زیادہ متاثرہ ملک بھارت میں کورونا ویکسینیشن کی وسیع تر مہم کی تیاریاں جاری ہیں۔ انڈین ایئر لائنز کی مدد سے ملک کے تمام حصوں میں کورونا سے بچائو کی ویکسین پہنچائی جا رہی ہے جبکہ لوگوں کو ویکسین لگانے کا عمل ہفتے سے شروع اور آئندہ چھ تا آٹھ ماہ میں مکمل ہو گا۔علاوہ ازیں عالمی ادارہ صحت کے تعاون سے غریب ممالک کو بطور امدادکورونا ویکسین فراہم کرنے کاعمل فروری میں شروع ہونے کاامکان ہے ۔