لندن (نیٹ نیوز) معروف برطانوی موسیقار جان لینن کے استعمال میں رہنے والا دھوپ کا چشمہ لندن میں ہونے والی ایک نیلامی میں 2 لاکھ ڈالر (یعنی تقریباً 3 کروڑ 10 لاکھ پاکستانی روپے ) میں فروخت ہوگیا، راک موسیقی کی دنیا میں جان لینن کے اس چشمے کے انداز کو ہمیشہ بے حد مقبولیت حاصل ہوئی، کیوں کہ یہ کافی منفرد سمجھا جاتا ہے ، اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق جان لینن ایک مرتبہ اس چشمے کو ایک گاڑی کی پیچھے والی سیٹ پر رکھ کر بھول گئے تھے ، سنہرے فریم کے ساتھ تیار ہوا یہ دھوپ کا چشمہ ایلن ہیئرنگ کا ہے ، جو جان لینن کے بینڈ کے ممبر جارج ہیریسن اور رِنگو کے ڈرائیور رہ چکے ہیں، یہ چشمہ ان تک کیسے پہنچا اس حوالے سے اپنے بیان میں ایلن ہیئرنگ کا کہنا تھا 1968 میں ایک روز میں ڈرم بجانے والے رِنگو کی گاڑی میں انہیں، جان اور جارج کو لینے گیا، جس کے بعد میں نے ان تینوں کو دفتر چھوڑا، گاڑی میں چشمہ بھول گئے ، البتہ یہ ٹوٹ چکا تھا۔ ایلن ہیئرنگ کا کہنا تھا کہ 'میں نے پھر اس ٹوٹے ہوئے چشمے کو کبھی ٹھیک نہیں کروایا اور اس ہی حالت میں نیلامی کے دوران ایک شخص نے اس چشمے کو 2 لاکھ ڈالر میں خرید لیا۔