واشنگٹن( نیٹ نیوز) امریکہ میں 70 سالوں کے بعد پہلی خاتون مجرم کو سزائے موت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی محکمہ انصاف نے خاتون کو سزائے موت دینے کے فیصلے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ لیسا مونٹگومرے نامی خاتون کو 8 دسمبر کو سزائے موت دی جائے گی۔امریکی محکمہ انصاف نے بتایا کہ خاتون کو 2004 میں ایک قتل کیس میں سزا سنائی گئی تھی جس میں انہوں نے ریاست میسوری میں حاملہ خاتون کو گلہ دبا کر قتل کیا تھا جس کا جرم ثابت ہونے پر لیسا کو زہر کاانجیکشن دے کر سزائے موت دی جائے گی۔امریکی محکمہ انصاف کے مطابق خاتون کے علاوہ مزید ایک مجرم کو 10 دسمبر کو سزائے موت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس میں مجرم نے اپنے ساتھیوں 2 یوتھ منسٹرز کو 1999 میں قتل کیا تھا۔