مکرمی!بچے قدرت کا انمول تحفہ ہیں۔ شادی شدہ زندگی کے سارے رنگ انہی کے دم قدم سے ہیں۔ لیکن جہاں قدرت نے ماں باپ کی زندگیوں میں رنگ بھرنے کے لیے بچے عطا کیے ہیں وہیں بچوں کی زندگی کو خوبصورت اور مکمل کرنے کے لیے ماں باپ جیسی ہستیوں سے نوازا ہے۔ کبھی غور کریں تو پتہ چلتا کہ انسان کہ علاوہ تمام جانداروں کی اولادیں پیدائش کے فوری بعد اٹھنے اور چلنے پھرنے کی صلاحیت رکھتیں ہیں۔ لیکن نسل آدم کی بقا کا انحصار اسکے والدین پر ہوتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ دنیا کے ہر مذہب میں والدین کا رتبہ بہت بلند رکھا گیا۔ اسلام میں بھی اولاد کو سب سے بڑی ذمہ داری قرار دیا گیا ہے۔بچے کی زندگی کے تمام معاملات کا دارومدار والدین کی تربیت پر ہوتا ہے۔ گھر کے افراد کا رویہ اور ماحول بچے کے مستقبل کا فیصلہ کرتے ہیں کہ و ہ کیسا انسان بنے گا۔ اسکے برعکس زیادہ تر گھرانوں میں ماں باپ کی لڑائیاں، الزام تراشیاں، نفرت، بے عزتی و بے اعتباری اور مار کٹائی عام ہو۔ ایسے خاندانوں سے تعلق رکھنے والے بچے جذباتی و اخلاقی لحاظ سے نہایت کمزور ہوتے۔ (مصباح چوہدری)