اسلام آباد(سپیشل رپورٹر) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ مقبوضہ کشمیر عالمی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ علاقہ ہے ،اقوام متحدہ کی اس ضمن میں قراردادیں موجودہیں ،بھارت اپنے روئیے سے ہر فورم پر اپنی ساکھ کھو رہا ہے ۔انہوں نے شنگھائی تعاون تنظیم کے این ایس ایز اجلاس میں بھارت کی جانب سے اٹھائے جانے والے بلاجواز اعتراض پراپنے بیان میں کہاکہ شنگھائی تعاون تنظیم کی وزرائے خارجہ کونسل کا اجلاس کچھ دن قبل ماسکو میں ہوا،شنگھائی تعاون تنظیم میں یہ اصول طے ہے کہ اس فورم پر دو طرفہ معاملات کو نہیں اٹھایا جا سکتا ،دو طرفہ معاملات کیلئے سائیڈ لائن ملاقاتیں ہوتی ہیں،ہم نے ایس سی او کے قواعد کی پاسداری کی ،بھارت نے قاعدے کی خلاف ورزی کی اوردو طرفہ معاملے پر اعتراض اٹھایا،کل شنگھائی تعاون تنظیم کے این ایس ایز کا اجلاس تھا جس میں بھارت نے پاکستان کے نقشے پر اعتراض اٹھایا جسے مسترد کر دیاگیا چنانچہ اسے ندامت اٹھانا پڑی ۔ پاکستان میں مصری سفیر طارق ڈہرورو نے وزیر خارجہ شاہ محمود سے ملاقات کی ۔ملاقات میں خطے کی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ فریقین نے پاکستان اور مصر کے مابین موجود گہرے دو طرفہ تعلقات پر اطمینان کا اظہار کیا۔شاہ محمود قریشی سے پاکستان میں یورپی یونین کی سفیر اینڈرولا کامینارا نے بھی ملاقات کی۔ملاقات کے دوران دو طرفہ تعلقات، کورونا عالمی وبائی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔