لاہور(عثمان علی)پنجاب میں سموگ سے بچنے کے لیے فوری اور موثر حفاظتی اقدامات اٹھانے کے لیے پنجاب کے مختلف محکمو ں کوذمہ داریاں تفویض کر دی گئیں ۔اس حوالے سے محکمہ داخلہ،محکمہ زراعت،لوکل گورنمنٹ اینڈ کمیونٹی ڈویلپمنٹ،ہاؤسنگ و اربن ڈویلپمنٹ اینڈ پنجاب ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ، کمیونیکیشن اینڈ ورکس، فارسٹ وائلڈ لائف اینڈ فشریز،انرجی ڈیپارٹمنٹ ،پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر، سپیشلائزڈہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجو کیشن ڈیپارٹمنٹ، انڈسٹریز اینڈ کامرس ڈیپارٹمنٹ،ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ، ہائر ایجوکیشن،سکول ایجوکیشن،سوشل ویلفیئر،انفارمیشن اینڈ کلچر،لیبر اینڈ ہیومن ریسورس ڈیپارٹمنٹ کوہدایات جاری کی گئی ہیں کہ موسم سرما میں سموگ ناصرف مختلف بیماریوں کا باعث بنتی ہے بلکہ روزمرہ کے امور کو بھی بری طرح متاثر ہ کرتی ہے اس حوالے سموگ کو کنٹرول کرنے اوراس کا سبب بننے والے عوامل کے سدباب کے لیے فور ی اقدامات اٹھائے جائیں جن میں فصلوں ،میونسپل ویسٹ ،ٹائر،پلاسٹک،پولی تھین بیگز،ربڑ اور چمڑے وغیر ہ جیسی مصنوعات کو آگ لگانے کی روک تھام کی جائے اسی طرح ٹریفک مینجمنٹ اورگاڑیوں کے دھویں کے حوالے سے بھی اقدامات کیے جائیں جو مقامی سطح پر سموگ بننے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں جس کے باعث فوری طور حفاظتی اقدامات اٹھائے جائیں جبکہ عوامی سطح پر آگاہی کے لیے پرنٹ میڈیا اور الیکٹرنک میڈیا سمیت تمام ذرائع بھی استعمال کیے جائیں محکمہ صحت،محکمہ ماحولیات سموگ کنڈیشنز میں صحت سے متعلقہ حفاظتی اقدامات کی ایڈوائزری جاری کریں گے جس کے لیے تمام ذرائع استعمال کیے جائیں گے ۔محکمہ داخلہ،ڈپٹی کمشنرز،ڈی پی اوزاپنے متعلقہ اضلاع میں فصلوں کو آگ لگانے پر پابندی ،دفعہ 144کا نفاذکوڈ آف کریمینل پروسیجرپر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے گا جبکہ ایسی انڈسٹری جو فضائی آلودگی کا سبب بنے رہی ہے اسی فوری طور پر بند کر دیا جائے گا۔منسٹری آف پٹرولیم اسلام آباد،انڈسٹری ڈیپارٹمنٹ،انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی، ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ لو سلفر فیول کو متعارف کرانے کے لئے فیڈرل حکومت کے ساتھ مربوط رابطے ،گاڑیوں کے زہریلے دھؤں کو کم کرنے کے لیے یورو 2ٹیکنالوجی اپنانے اور کیٹالیٹک کنونٹر لگانے جیسے اقدامات کیے جائیں گے اسی طرح دیگر تمام ادارے اپنے اپنے متعلقہ محکموں کے حوالے سے ایڈوائزری جاری کرنے اور حفاظتی اقدامات اٹھائیں گے ۔