وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے مصنوعی مہنگائی کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کرنے کی ہدایت کی ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت مسلسل دعوئوں اور وعدوں کے باوجود ملک میں روز افزوں مہنگائی کو کنٹرول کرنے میں ناکام ہے۔ وزیر اعظم عمران خان متعدد مرتبہ مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے اقدامات کی خود نگرانی کرنے کے اعلانات کر چکے ہیں مگر اس کے باوجود ذخیرہ اندوز اور ناجائز منافع خوروں کو لگام ڈالنے میں ناکام دکھائی دیتے ہیں۔ رمضان المبارک میں پھل فروش من چاہے دام وصول کرتے رہے تو عیدالفطر کے مبارک موقع پر قصاب حکومت کی طرف سے مقرر کردہ نرخوں پر گوشت فروخت کرنے پر آمادہ نہ ہو سکے۔ عید پر قصاب حضرات بیف 650 اور قیمہ 700روپے میں فروخت کرتے رہے یہاں تک کہ 180روپے میں ملنے والی برائلر مرغی 470 روپے تک فروخت ہوئی .کہنے کو عوام کو ارزاں نرخوں پر اشیاء ضروریہ کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے پرائس کنٹرول کمیٹیاں موجود ہیں‘ حکومت نے اس مقصد کے لئے ٹائیگر فورس کو بھی میدان میں اتار کر دیکھ لیا مگر ناجائز منافع خور کسی بھی حکومتی اقدام کو خاطر میں نہیں لا رہے۔ اب وزیر اعلیٰ پنجاب نے مصنوعی مہنگائی پیدا کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کا اعلان کیا ہے. بہتر ہو گا حکومت اشیاء ضروریہ کے نرخ مقرر کرنے کے ساتھ ان کی مقرر کردہ قیمتوں پر فروخت کو یقینی بنانے کے لئے عملی اقدامات کرے تاکہ عوام کو مہنگائی کے جان لیوا عفریت سے نجات مل سکے۔