مکرمی !تاریخ گواہ ہے کہ امت مسلمہ کی سر بلندی کا دور جو صدیوں پر محیط ہے اسی صورت قائم و دائم رہا کہ انہوں نے ظلم کے بجائے اسلامی اصولوں کے تحت حکومت کی، اللہ اور اسکے رسول ؐ کی ناموس پر کوئی سودے بازی نہیں۔ خاتم النبیین محمدؐ کے دین کے نفاذ کو انسانیت کی نجات کا ذریعہ سمجھا۔ اور جب اس راہ پر چلنے سے انکے قدم ڈگمگائے تو خسارے میں چلے گئے۔اسلامی نصب العین پر حاصل کیا جانے والا ملک آج تک اپنی راہ متعین نہ کر سکا۔ ہر آنے والی حکومت غیروں کے اشاروں پر چلتی رہی۔نہ کسی کونصب العین کی فکر رہی اور نہ اس راہ پر چلنے کی کوششیں نظرآئیں۔۔موجودہ حکمران ہر چیز کو ٹیکس کے شکنجے میں جکڑنے کی کوشش میں مصروف عمل ہیں، آخر ایسا کیوں؟ (صائمہ عبدالواحد، کراچی)