کراچی ( سٹاف رپورٹر)پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر وسیم اکرم کی اہلیہ شنیرا اکرم نے کراچی کے ساحل سمندر کلفٹن کو شہریوں کے لیے بند کرنے کا مطالبہ کردیا۔شنیرا اکرم نے سی ویو کو عوام کے لیے خطرناک اور غیر محفوظ قرار دیا جبکہ اپنی ٹویٹس میں حیران کن ویڈیوز بھی شیئر کیں، جن میں سی ویو پر کچرے میں بڑی تعداد میں موجود استعمال شدہ کھلی سرنجیں، بلڈ وائل نظر آئیں۔انہوں نے اپنی پہلی ٹویٹ میں لکھا کہ میں کراچی کی شہری ہونے کے ناطے کلفٹن کے ساحل کو خطرناک قرار دیتی ہوں اور مطالبہ کرتی ہوں کہ یہاں ایمرجنسی نافذ کردی جائے ۔اپنی اگلی ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ میں نے صرف 10 منٹ کے اندر یہاں 4 درجن کھلی ہوئی سرنجز دیکھیں، ہمارے سمندر کو فوری بند کرنا ہوگا، جب تک حکام اس کی صفائی نہیں کرتے اور اسے عوام کے لیے محفوظ قرار نہیں دیتے ، لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ہیں۔انہوں نے لکھا کہ نیوز چینلز کو یہاں آکر یہ سب دیکھنا چاہیے اس سے پہلے کے ٹریکٹرز اس کچرے کو زمین کے اندر دبا دیں۔شنیرا اکرم کے مطابق میں چار سال سے روزانہ کلفٹن ساحل پر سیر کرنے جاتی ہوں لیکن مجھے آج تک اتنا ڈر نہیں لگا جتنا آج لگ رہا ہے ۔ سندھ حکومت کے ترجمان بیرسٹر مرتضی وہاب نے ساحل سمندر کا دورہ کیا ۔ بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ ٹوئٹرکے زریعے پیغام منظر عام پر آیا کہ کراچی کے ساحل پر سرنجز پڑی ہیں۔ اس صورتحال پر وزیر اعلی نے نوٹس لیا ۔ دو سے ڈھائی گھنٹے میں ساحل کو کلئیر کردیا گیا ۔ آج ہسپتالوں اور متعلقہ اداروں کو اس حوالے سے خطوط لکھ دئیے جائیں گے ۔