لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال شیخ، سینئر نائب صدر علی حسام اصغراور نائب صدر میاں زاہد جاوید احمد نے سٹیٹ بینک آف پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ صنعت سازی کے فروغ اور انہیں وسعت میں مدد دینے کے لیے مارک اپ ریٹ کو سنگل ڈیجٹ تک لائے تاکہ سستے قرضوں کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے ۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہاکہ زیادہ مارک اپ کی شرح نجی شعبے میں قرضوں کے حصول کی حوصلہ شکنی کررہی ہے جس سے معاشی سرگرمیاں بھی متاثر ہورہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مارک اپ کی موجودہ شرح 13.25فیصد بہت زیادہ ہے جس کا اثر صنعتوں کی پیداواری لاگت پر پڑ رہا ہے ، مارک اپ کی شرح سنگل ڈیجٹ تک آنے سے صنعتوں کو فائدہ ہوگا ۔اس کے ساتھ ہی حکومت کو صنعتی ترقی کے اہداف حاصل کرنے ، پیداواری لاگت میں کمی کرنے اور بینکوں کے سرمائے کو گردش میں رکھنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ مارک اپ ریٹ پیداواری لاگت پر اثر انداز ہوتا ہے ، پاکستانی مصنوعات بین الاقوامی مارکیٹ میں ان ممالک کی مصنوعات کا مقابلہ نہیں کر سکتی جن میں مارک اپ ریٹ صفر یا اس سے بھی کم ہے ۔