لاہور، فیروزوالا، اسلام آباد ( کرائم رپورٹر ، سپیشل رپورٹر، اپنے سٹاف رپورٹر سے ، ،نامہ نگار ،تحصیل رپورٹر ،وقائع نگار ) شاہدرہ میں ایل پی جی ٹینکر الٹنے کے بعد دھماکے سے پھٹ گیا جس سے ٹر یفک وارڈن کا با پ جا ں بحق ہو گیا جبکہ اس سمیت 9افراد جھلس گئے ، در جنوں گاڑیاں ، رکشے ،موٹرسائیکلیں جل کر راکھ ہوگئیں ، آتشزدگی سے علا قہ میں خوف طا ری ہو گیا ۔پولیس کے مطابق گذ شتہ صبح شاہدرہ موڑ پر ایل پی جی ٹینکر کا ٹائر پھٹنے کے باعث ٹینکر الٹ گیا اور پھر آگ بھڑک اٹھی، موجود افراد نے بھاگ کر اپنی جانیں بچائیں ، ریسکیو اور فائربریگیڈ کی ٹیموں نے دو گھنٹے بعد آگ پر قابو پا لیا، ریسکیو کے 56 اہلکاروں اور 15 فائر بریگیڈ نے حصہ لیا، جھلسنے والے تمام افراد کو میو ہسپتال منتقل کیا گیا ۔ زخمیوں میں زرین، عظیم، محمد افضل، اخلاق، ناصر، محمد شریف، عالمگیر، اشتیاق احمد اور شہزاد شامل ہیں ،تین زخمیو ں کی حالت انتہا ئی تشویشنا ک ہے ،میوہسپتال انتظامیہ کے مطابق زخمیوں میں وارڈن یاسر کے والد زاہد عباس دم توڑ گئے ، زاہد عباس ریٹائر ڈ بینکر اور پنشن کی غرض سے شاہدرہ چوک میں موجو د تھے ، سی ٹی او سید حماد عابد بھی زخمی ٹریفک وارڈن یاسر کی عیادت کیلئے میو ہسپتال پہنچے ، جنہیں بعد ازاں ڈسچارچ کر دیا گیا ،جائے وقوعہ پر پارکنگ میں زیادہ تر موٹرسائیکلیں، چنگ چی رکشے ، گاڑیاں ٹریفک پولیس کی جانب سے بند کرکے کھڑی کی گئیں تھیں ۔ متاثر ین کا کہنا تھا کہ ٹریفک پولیس نے ہماری گاڑیاں بلاوجہ بند کر کے اس پارکنگ میں کھڑی کی تھیں ، ٹریفک پولیس اور حکومت ہمارا ازالہ کرے ۔ پو لیس نے زخمی ڈرا ئیور کے خلا ف تیز رفتاری کے تحت قا نو نی کا رروا ئی کر لی ۔ ڈی سی لاہور دانش افضال نے ہسپتال انتظامیہ کو ہدایت کی کہ زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کی جائے ۔ اوگرا نے فوری طور پر واقعہ کی انکوائری کے احکامات جاری کر دیے ۔