غزہ،دو حہ (این این آئی،صباح نیوز ، نیٹ نیوز،آن لائن )اسرائیلی فوج نے غزہ پر فضائی حملے جاری رکھے ہوئے ہیں جس کے نتیجے میں مزید 9 فلسطینی شہید ہوگئے شہید ہو نے والوں میں ایک ہی خاندان کے 6افراد بھی شامل ہیں تین روز کے دوران شہید فلسطینیوں کی تعداد 31تک پہنچ گئی ہے جبکہ 100سے زائد زخمی بھی ہو ئے ہیں ۔اسلامی جہاد کے عسکری ونگ القدس بریگیڈ نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے اسرائیلی ریاست کے دارالحکومت تل ابیب کو میزائلوں سے نشانہ بنایا ہے جس کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے ۔قطر نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری وحشیانہ بمباری کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ غزہ کے اسلامی جہاد گروپ نے اسرائیل کیساتھ لڑائی کے بعد سیز فائر کا اعلان کر دیا ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق مقامی ذرائع نے بتایاکہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب غزہ میں متعدد مقامات پر اسرائیلی فوج کی وحشیانہ بمباری کے نتیجے میں مزید 9فلسطینی شہید اور 12 زخمی ہوگئے ۔ اسرائیلی فوج نے غزہ پر 90 زمینی اور فضائی حملے کئے جن میں اب تک 31 فلسطینی شہید اور 100 زخمی ہو چکے ہیں ۔ غزہ کے شفا ہسپتال میں مزید 9 لا شیں منتقل کی گئیں۔ طبی ذرائع اور عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ یہ تمام عام شہری تھے اور غزہ شہر کے گنجان آباد علاقے میں مقیم تھے ۔ان شہداء میں ایک فلسطینی باپ بیٹے سمیت خاندان کے 6افراد بھی شامل ہیں ۔ ادھر اسلامی جہاد کے عسکری ونگ القدس بریگیڈ کے ترجمان ابو حمزہ نے کہا کہ اسرائیلی ریاست کے دارالحکومت تل ابیب کو میزائلوں سے نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے تاہم بزدل صہیونی دشمن اپنا نقصان چھپا رہا ہے ۔ غزہ کی پٹی میں اسلامی جہاد کے ترجمان ابو حمزہ نے کہا کہ صہیونی دشمن ریاست نے فلسطینیوں کے میزائل حملوں کی وجہ سے ہونے والے نقصانات کو خفیہ رکھنے کی کوشش کی ہے ۔ اسلامی جہاد گروپ کے ترجمان مصعب البریم نے اپنے بیان میں سیز فائر کا اعلان کرتے ہوئے کہا مصری بروکر معائدہ پر ہم ساڑھے پانچ بجے سے عملدرآمد کا آغاز ہو گیا ہے ۔قطر نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری وحشیانہ بمباری کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔علا وہ ازیں عرب لیگ نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی جاری وحشیانہ کارروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ غزہ کی پٹی پر موجودہ جارحیت کا ذمہ دار اسرائیل خود ہے ۔ ادھر غزہ پر اسرائیلی فوج کی یلغار کے بعد مشرق وسطی کیلئے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی نیکولائے میلاڈینوف مصر پہنچ گئے جہاں وہ مصری قیادت سے فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان جنگ بندی کیلئے بات چیت کریں گے ۔تیونس نے بھی اسر ائیلی جار حیت کی شدید مذ مت کی ہے ۔اسرائیل اور فلسطینی تنظیم کے درمیان 2 روز تک کشیدگی کے بعد جنگ بندہ کا معاہدہ ہوگیا۔