مکرمی !مودی سرکار کی انسانیت سوز پالیساں نہ صرف مسلمانوں بلکہ خود بھارت کے لیے بھی خطرناک ثابت ہو رہی ہیں۔ بھارت پر ہندو برتری کی خواہشمند انتہا پسند اور نسل پرست نظریات کی قائل مودی حکومت قابض ہے۔ مودی حکومت نے 90 لاکھ کشمیریوں کو مقبوضہ کشمیر میں قیدکر رکھا ہے جس نے پوری دُنیا کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔مودی سرکار کے انوکھے مظالم کے باوجود کشمیری عوام نے اپنی پرعزم جدوجہد میں کوئی کمی نہیں آنے دی اور عالمی برادری کے سامنے ہندو انتہاء پسند مودی سرکارکا جنونی چہرہ بے نقاب کرنے کا سلسلہ بھی ساتھ ہی ساتھ جاری رکھا ہوا ہے۔ خود بھارت کے انصاف پسند حلقوں میں بھی مودی حکومت کے اس ناجائز اقدام کے خلاف شدید ردعمل پایا جاتا ہے۔مودی سرکار کی ہٹ دھرمی نہ صرف پڑوسی ممالک، بلکہ دُنیا کے امن کے لیے بھی خطرناک ہیں۔مودی سرکار کی فسطائی پالیسیوں کی وجہ سے بھارت رہنے کے لیے دُنیا کا پانچواں خطرناک ملک قرار دیا جا چکا ہے، جو کہ ان انسانیت سوز پالیسوں کا منہ بو لتا ثبوت ہے۔ ان حالات میں عالمی برادری کی ذمہ داری بنتی ہے کہ بھارت میں بڑھتی جنونیت کے انسداد کے لیے اپنا کردار ادا کرے اور مودی کو بھارت میں مسلمانوں کی نسل کشی سے باز رکھے۔ (عابد ہاشمی،آزاد کشمیر)