لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے 21 بھٹہ مزدور بازیاب کروا کر آزاد کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔خواتین نے بیان دیا کہ بھٹہ مالک جبری مشقت کرتا اور سرکاری ریٹ کے مطابق اجرت بھی نہیں دیتا۔ لاہور ہائیکورٹ نے بھتہ مزدور غلام نبی کی درخواست پر سماعت کی بھٹہ مزدوروں میں خواتین اور بچے بھی شامل عدالتی حکم پر بھٹہ مزدوروں کو بازیاب کروا کر عدالت کے روبرو پیش کیا گیا درخواست گزار وکیل نے عدالت کو بتایا کہ بھٹہ مالک نے مزدوروں کو حبس بے جا میں رکھا ہے جبکہ بھٹہ مزدوروں پر تشدد کیا جاتا اور اجرت بھی نہیں دی جاتی درخواستگزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ اجرت مانگنے پر بھٹہ مزدوروں کو تشدت نشانہ بنایا تاجا ہے ۔