لاہور (خبر نگارخصوصی، نامہ نگار خصوصی،کر ائم رپورٹر، آن لائن ) لاہور میں دھرنا راج چھاگیا،نابینا افراد مال روڈ،انجینئرز اور ٹیکنالوجسٹ نے سیکرٹریٹ کے سامنے بیٹھک لگالی۔تفصیلات کے مطابق نابینا افراد کا احتجاج اور دھرنا چوتھے روز بھی جاری رہا۔ نا بینا افراد نے کلب چوک کے باہر مال روڈ کی سڑک کے ایک حصے کو دھرنا دے کر بند کئے رکھا اور اپنے مطالبات کی حمایت میں نعرے بازی کرتے رہے ۔ نابینا افراد نے کہا کہ مطالبات کی منظوری تک دھرنے سے نہیں اٹھیں گے ۔ادھر اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے نابینا افراد پر پولیس تشدد کیخلاف لاہور ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کر دی ،درخواست میں موقف اختیار کیاگیا کہ مرکزی او رصوبائی حکومت نابینا افراد کو ان کا حق دینے میں ناکام رہی ،ان کا کوٹہ مختص کیا جائے اورجن پولیس اہلکاروں نے نا بینا افراد پر تشدد کیا ان کے خلاف کارروائی کی جائے ۔علاوہ ازیں پنجاب کے مختلف محکموں کے سب انجینئر ز اور ٹیکنالوجسٹ نے گزشتہ روز بھی اپنے مطالبات کے حق میں سول سیکرٹریٹ کے سامنے دھرنا دیا ،سب انجینئر ز ویلفیئر ایسوسی ایشن کے رہنماؤں اعجاز ارشد،نعمان ٹیپو، ملک فاروق ،ندیم شیرازی ،محمد علی اوردیگر نے کہا کہ پہلے بھی احتجاج کیا تھا اور ہمیں مطالبات تسلیم کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی لیکن اس یقین دہانی پر عمل نہ ہوسکا اس لئے اب جب ہمیں مذاکرات کے عمل پر اعتماد نہیں ہوگا ہم مذاکرات میں شریک نہیں ہوں گے ، سردی سے گھبرانے والے نہیں ہیں جب تک ہمارے مطالبات منظور نہیں ہوتے ہم یہاں سے نہیں جائیں گے ۔