چناری،لاہور ،کراچی ( خبرنگار خصوصی ، نمائندہ 92نیوز )جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کا بھارتی مظالم اور کشمیر کی آزادی کے حق میں پانچویں روز بھی لائن آف کنٹرول چکوٹھی اور چناری کے درمیان (چنوئیاں،بھرائیاں )کے مقام پر احتجاجی دھرنا جاری رہا، لبریشن فرنٹ نے آئندہ کے لائحہ عمل کے لیے کی جانے والی پریس کانفرنس ناگزیر وجوہات کی بناء پر ملتوی کردی ،سابق وزیراعظم آزاد کشمیر و پیپلز پارٹی کے رہنماچودھری عبدالمجید،سابق مشیر عارف مغل ،سینٹرل بار ایسوسی ایشن مظفرآباد کے صدر راجہ آفتاب احمد خان اور دیگر ساتھیوں کے ہمراہ اظہار یکجہتی کے لیے دھرنے میں پہنچ گئے ۔ سابق وزیراعظم چودھری عبدالمجید اپنے خطاب میں کہا ہے کہ یہ ایک دن کی تحریک نہیں ہے اس کے لیے طویل جہدوجہد کرنا پڑے گی، اگر ہمارے اندر غیرت ہے تو ہمیں اس تحریک کا ساتھ دینا چاہیے ،کشمیر آزاد ہو کر رہیگا۔لاہور میں پنجاب وویمن پروٹیکشن اتھارٹی ،ہیومن رائٹس کرائسس سینٹر اور گورنمنٹ کالج اپوا برائے خواتین کے اشتراک سے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی ،جس کی قیادت چیئر پرسن پنجاب وویمن پروٹیکشن اتھارٹی کنیز فاطمہ چڈھٹر نے کی ،انکے ساتھ ہیومن رائٹس کرائسس سینٹر کے افسران اور گورنمنٹ کالج اپوا برائے خواتین کی اساتذہ اور طالبات کے علاوہ خواتین بھی ریلی میں شریک ہوئیں جبکہ اسلامی جمعیت طلبہ نے کراچی بھر میں 20 روزہ مہم "اب ہند بنے گا پاکستان" کے عنوان سے چلائی۔ اس مہم کے حوالے سے ترجمان اسلامی جمعیت طلبہ کراچی عبدالاحد طلحہ کا کہنا تھا کہ اس مہم کے اختتام پہ اسلامی جمعیت طلبہ کراچی 12 اکتوبر کو حکیم سعید گراؤنڈ میں کشمیر کنونشن کے نام سے ایک کنونشن منعقد کرے گی، کنونشن میں سینیٹر سراج الحق، ناظم اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان محمد عامر اور دیگر سیاسی اور مذہبی شخصیات کی شرکت متوقع ہے ۔