لاہور(حافظ فیض احمد) محکمہ اینٹی کرپشن کی کار کردگی کو بہتر بنانے کیلئے لاہور ریجن کو 2 حصوں میں تقسیم کر دیا گیا اور اینٹی کرپشن لاہور میں ریجن بی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے ۔ نوٹیفکیشن کے تحت اینٹی کرپشن ریجن بی میں اینٹی کرپشن آفس ننکانہ صاحب، قصور اور شیخو پورہ شامل کئے گئے ہیں اور ریجن بی کیلئے الگ سے نئی عمارت بھی حاصل کی جا رہی ہے جس میں ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ریجن بی، ڈپٹی ڈائریکٹرز ، اسسٹنٹ ڈائریکٹرز اور دیگر ماتحت عملہ کو تعینات کیا جائیگا اور اس حوالے سے باقاعدہ فہرستیں تیار کی جا رہی ہیں ۔ واضح رہے کہ ریجن بی بننے کے بعد اینٹی کرپشن لاہور ریجن اے صرف صوبائی دارالحکومت تک محدود ہوگا جبکہ اس سے قبل اینٹی کرپشن لاہور ریجن میں ضلع قصور ، شیخوپورہ اور ننکانہ صاحب بھی شامل تھے جس کی وجہ سے کارکردگی متاثر ہو رہی تھی اور زیر التوا انکوائریوں اور مقدمات کی تعداد میں بھی اضافہ ہورہا تھا۔ اینٹی کرپشن حکام نے مذکورہ ریجن کی کارکردگی کو بہتر بنانے کیلئے اسے دو حصوں میں تقسیم کردیا ۔واضح رہے کہ اینٹی کرپشن آفس شیخوپورہ، ننکانہ صاحب اور قصور آفس کے افسروں اور ملازمین کو اکثر اوقات بعض کیسوں کے معاملے میں لاہور آنا پڑتا تھا ، اسی طرح مذکورہ بالا دفاتر کے انچارج ڈپٹی ڈائریکٹرز ہوتے تھے اور ان کو بھی اکثر اوقات میٹنگز اور دیگر معاملات کے سلسلے میں لاہورآنا پڑتا تھا۔ ریجن بی بننے سے تینوں دفاتر ڈائریکٹر ریجن بی کو جوابدہ ہونگے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اینٹی کرپشن کے بعض افسروں اور ملازمین نے ریجن بی کے بجائے ریجن اے میں اپنی تعیناتی کیلئے ابھی سے کوششیں شروع کردی ہیں۔