نئی دہلی(نیٹ نیوز) سرحدی تنازع پر بھارت کے بجائے اپنے آبائی ملک نیپال کی حمایت کرنے پر بولی ووڈ اداکارہ 49 سالہ منیشا کوئرالہ کو بھارتی شہریوں نے ہندوستان چھوڑ کر چلے جانے کے طعنے دینا شروع کردیئے ۔منیشا کوئرالہ کا تعلق نیپال سے ہے تاہم انہوں نے کیریئر بنانے کے لیے بھارت کا رخ کیا،منیشا کوئرالہ نیپال کے ایک سیاسی ہندو گھرانے میں پیدا ہوئیں، ان کے والد نیپال کے وزیر رہ چکے ہیں جب کہ ان کے دادا 1950 کی دہائی میں نیپال کے وزیر اعظم رہ چکے ہیں۔ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق منیشا کوئرالہ نے نیپال کے وزیر خارجہ پردیپ گیاولی کی ٹویٹ پر جواب دیتے ہوئے لکھا کہ انہیں اُمید ہے کہ بھارت، نیپال اور چین اپنے سرحدی تنازع کو خوش اصلوبی سے حل کرلیں گے ۔اپنی ٹویٹ میں انہوں نے نیپال کے وزیر خارجہ کا نیپال کی قوم کا کیس بہادری سے لڑنے پر شکریہ بھی ادا کیا۔منیشا کوئرالہ کی ٹویٹ کے بعد کئی صارفین نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اگر انہیں انڈیا اتنا ہی برا لگ رہا ہے تو وہ یہاں سے نیپال چلی جائیں اور وہاں جاکر پیسے کمائیں لیکن اداکارہ نے کوئی جواب نہیں دیا۔ بھارت کی سابق وزیر خارجہ سشما سوراج کے شوہر قانون دان سوراج کشال نے بھی اداکارہ سے شدید اختلاف کیا ۔