لاہور(اشرف مجید)پنجاب حکومت نے فنڈزمیں کمی کے باعث میٹرو بس کمپنی اور سپیڈو بس کمپنی کے ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی روک دی ، جس کے باعث کمپنیوں کے ہزاروں ملازمین عید الضحیٰ کی خوشیوں سے محروم ہونگے ، کمپنیوں کی جانب سے صورت حال مزید ابتر ہونے سے روکنے کے لئے فوری طور پر وزیر اعلیٰ پنجاب کو پانچوں بڑے منصوبوں کو بحال کرنے کی درخواست دے دی گئی ہے ،ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ حکومت کی جانب سے کورونا لاک ڈائون کے باعث بند کی جانے والی میٹرو بس سروس لاہور ،ملتان اور راولپنڈی سمیت سپیڈو بس سروس لاہور اور ملتان کے ملازمین کے لئے اپریل میں فنڈز جاری کئے گئے تھے تا کہ انکے ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی ہو سکے لیکن اب تک مئی اور جون کی ادائیگی نہیں کی گئی ہے ، کمپنیوں کی جانب سے ملازمین کو واضح کر دیا گیا ہے کہ اگر دو روز میں حکومت کی جانب سے فنڈز جاری نہیں کئے جاتے تو وہ عید الضحیٰ پر ملازمین کو تنخواہ نہیں دے سکیں گے ،ذرائع کا کہنا ہے میٹرو بس سروس اور سپیڈو بس سروس کو خدمات دینے والی کمپنیوں کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کو لیٹر لکھا گیا ہے جس میں کہا گیا کہ حکومت انٹر سٹی پبلک ٹرانسپورٹ کی طرح میٹرو اور سپیڈو بس چلانے کی اجازت دے تا کہ ملازمین کو کم از کم تنخواہوں کی ادائیگی کرنے میں آسانی ہوجائے ۔ مراسلہ میں نیو یارک ،لندن ،پیرس میں چلنے والی پبلک ٹرانسپورٹ کا بھی ذکر کیا گیا ہے کہ وہاں پر سنگین صورت حال میں بھی بسوں اور میٹرو ٹرینوں کو چلایا گیا ۔میٹرو اور سپیڈو بس بند ہونے سے لاہور اور دیگر شہروں موٹر سائیکل رکشوں کی تعداد میں بے پناہ اضافہ ہو گیا جو ایس او پیز کی مکمل خلاف ورزی کر رہے ہیں۔