لاہور(اپنے نیوز رپورٹر سے ،92نیوزرپورٹ ) شہباز شریف فیملی کی مبینہ منی لانڈرنگ کے معاملہ پر وعدہ معاف گواہوں شاہد رفیق اورآفتاب محمود نے شہباز شریف فیملی کے خلاف جوڈیشل مجسٹریٹ ذوالفقارباری کو بیان ریکارڈ کرا دیا۔ اپنے بیان شاہد رفیق نے کہا میں زارکو ایکسچینج کے نام سے کاروبار کرتا تھا۔ سلمان شہباز ، حمزہ شہباز، نصرت شہباز اور رابعہ عمران کے اکاؤنٹ میں جعلی ٹی ٹیز لگائیں۔ 2008.09میں شہباز شریف فیملی کے اکاؤنٹس میں ساڑھے 24 لاکھ ڈالر کی جعلی ٹی ٹیز لگائیں، قاسم قیوم پاکستان میں ان ٹی ٹیز کی رقم میرے گھر پہنچا دیتا تھا ، میرے کزن آفتاب محمود کے ذریعے بیرون ملک سے جعلی ٹی ٹیز بھجوائی جاتیں، تسلیم کرتا ہوں کہ میں نے شہباز شریف خاندان کے لیے منی لانڈرنگ کی۔ آفتاب محمود نے اپنے بیان میں کہامیں برطانیہ میں عثمان انٹرنیشنل کے نام سے منی ایکسچینج چلاتا تھا،میرے کزن شاہد رفیق نے کہاشہباز شریف فیملی کے لیے جعلی ٹی ٹیز بھیجنی ہیں ، جن لوگوں کے نام سے ٹی ٹیز شہباز شریف فیملی کے اکاؤنٹس میں بھیجی وہ تمام فرضی تھے ،میں ان سے کبھی نہیں ملا ، شہباز شریف فیملی نے کالے دھن کو سفید کرنے کے لیے ہمارے ذریعے جعلی ٹی ٹیز لگوائیں۔