لاہور، شیخوپورہ( خصوصی نمائندہ، ڈسٹرکٹ رپورٹر) ریل بازار نارنگ منڈی کے دکانداروں نے محض چوری کے شبہ پر 4 بچوں کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، دو بھائیوں مبشر اور کاشف اور دیگر مصطفی اور عمران کا منہ کالا کر کے ، رسیوں سے جکڑ کر آدھے سر کے بال منڈوا کر پورے بازار کا چکر لگوایا، جوتوں ، گھونسوں اور لاتوں کا بے دریغ استعمال کیا گیا، بہیمانہ تشدد سے بچوں کی حالت غیر ہوگئی، چند گز کے فاصلے پر پولیس کی حفاظت میں دینے کی بجائے مسلسل تشدد کا نشانہ بناتے رہے ، اہل علاقہ نے ذمہ داران کے خلاف سخت ایکشن لینے کا مطالبہ کر دیا، ڈی پی او کے حکم پر ملزمان اصغر، عمران، جہانگیر، ندیم حیدری، شاہد ملک، سمیع اللہ ، فہد اور 6 نامعلوم افراد کیخلاف مقدمہ درج کرکے اصغر اور فہد کو گرفتار کرلیا گیا۔ اے ایس پی مریدکے کی سربراہی میں ملزمان کی گرفتاری کے لیے ٹیم تشکیل دے دی گئی، وزیر اعلی پنجاب نے نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو ملزمان کی گرفتاری کا حکم دیا ہے اور آر پی او شیخوپورہ سے رپورٹ طلب کرلی ، وزیر اعلی نے کہا تشدد کا نشانہ بننے والے بچوں کو ہر صورت انصاف فراہم کیا جائے ،وزیر اعلی نے کہا کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ وزیر اعلی سردار عثمان بزادر کی ہدایت پر آج آئی جی پنجاب اور آر پی او شیخوپورہ رینج نارنگ منڈی کا دورہ کریں گے ۔