لاہور،راولپنڈی(نامہ نگار خصوصی،نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ (ن) کے سیکرٹر ی جنرل احسن اقبال نے کہا ہے نیب کو سیاسی انتقام کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے ، قومی احتساب بیورو ایک آنکھ سے محروم ہے اسے صرف اپوزیشن نظر آتی ہے ، اس کی حکومت کو دیکھنے والی آنکھ اندھی ہوچکی ہے ، حکمرانوں سے نجات تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا حکومت نے معیشت تباہ کر دی ، ملک کو بدترین معاشی و سیاسی بحران میں دھکیل دیاگیا ،حکومت ملک ، معیشت و جمہوریت کے لئے خطرہ بن چکی،شہبازشریف کیخلاف دیدہ دلیری سے نیب گردی کی گئی،11اکتوبرکو جلسے سے احتجاجی تحریک کاآغاز کررہے ہیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہاچیئرمین نیب کی تعیناتی کا کیس بھی میرے خلاف بنایا جائے ،ہماری ساری تعیناتیاں غلط ہے بس ایک تعیناتی ٹھیک ہے وہ چیئرمین نیب کی تعیناتی،یہ ساری سیاسی انجینئرنگ ہے ، مجھے گرفتار کرنا ہے تو کرلیں لیکن ملک کو چلنے دیں، ملک میں کسی بھی وقت کسی کی گرفتاری ہوسکتی ہے ،جب تک نیب ہے اس ملک میں کوئی کام نہیں ہوگا، جمہوریت کے لیے جگہ تنگ کی جا رہی ہے ، جمہوریت پسپا ہو رہی ہے اور یہ خوفناک بات ہے ،نیب کا مقصد صرف سیاستدانوں اور وزرا کو بے عزت کرنا ہے ،جو سرکاری آفیسر ایمانداری سے ریٹائرڈ ہوگیا اسے نیب میں گھسیٹا جارہا ہے ۔منی لانڈرنگ فیشن ایبل لفظ بن چکا۔ وزرا، نہ وزیر اعظم اور نہ ہی نیب کو اس کا معلوم ہے ،عوام حکومت سے نجات چاہتے ہیں۔کیپٹن صفدر نے کہا نیب انتقامی کارروائیوں میں ملوث ہے ، مجھے لاہور نہیں نیب پشاور میں بلانا چاہتے ہیں، جمہوریت کی بحالی کے لیے تحریک چل چکی ہے ،میں گھر کا بھیدی ہوں لنکا ڈھاؤں گا۔