کمشنر لاہور کی ہدایت پر دو بڑے ہسپتالوں کی پارکنگ میں اوورچارجنگ کرنے والے ٹھیکیداروں کو 70ہزار روپے جرمانہ کیا گیا ہے۔ میو ہسپتال اور سروسز ہسپتال کے پارکنگ سٹینڈوں پر پارکنگ فیس 10کی بجائے 20روپے وصول کی جا رہی تھی۔ شہریوں کی طرف سے یہ شکایات عام ہیں کہ اکثر نجی و سرکاری اداروں خصوصا ہسپتالوں میں اپنی موٹر سائیکلیں اور گاڑیاں پارک کرنے والوں سے مقررہ سرکاری فیس سے زیادہ پیسے و بلکہ بعض جگہوں پر ڈبل سے بھی زیادہ پارکنگ فیس وصول کی جاتی ہے۔ عام طور پر ان پارکنگ سٹینڈوں کے ٹھیکے بھی متعلقہ اداروں کی انتظامیہ کی پسند یا نا پسند، اقربا پروری اور رشوت کی بنیاد پر ایسے ٹھیکیداروں کو دیئے جاتے ہیں جن سے مالی فوائد حاصل کیے جا سکیں ۔ یہ ٹھیکیدار بعد ازا ںاپنی من مانیاں کرتے ہیں اور ہسپتالوں میں آنے والے مریضوں کے پریشان حال لواحقین سے 10کی بجائے 20روپے وصول کرتے ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ تمام بڑے سرکاری و غیر سرکاری اداروںخصوصاً ہسپتالوں کے پارکنگ سٹینڈز کا تمام ریکارڈ چیک کیا جائے اور جو ٹھیکیدار زائد فیس اور اوورچارجنگ کے مرتکب پائے اس کے خلاف مقدمات درج کیے جائیں ،انہیںبھاری جرمانے کیے جائیں اور پارکنگ کے سرکاری ٹھیکے میرٹ کی بنیاد پر مستحق اور دیانتدارافراد کو دیے جائیں تاکہ اوور چارجنگ کے رجحان کا قلع قمع کیا جا سکے۔