اسلام آباد (ملک سعیداعوان ) وزارت خارجہ کی جانب سے اپنے افسران کی رہائشی عمارتوں کی تزئین و آرائش پرغیر قانونی طورپر فنڈز خر چ کرنے کا انکشاف ہواہے ، وزارت خارجہ نے رہائشی عمارتوں کی تزئین و آرائش پر 91لاکھ 82ہزار 550روپے خر چ کئے گئے ۔روزنامہ 92نیوز کو دستیاب دستاویز کے مطابق وزارت خارجہ کی جانب سے مالی سال 2017-18 میں تزئین و آرائش کی مد میں حکومتی ملکیتی رہائشوں پر 58لاکھ 39ہزار 520اور فارن آفس لاج میں رہائشوں پر 33لاکھ 43ہزار روپے کے اخراجات کئے ۔ دفترخارجہ رہائشی عمارتوں کی تزئین و آرائش کرنے کا مجاز نہیں تھا۔دستاویزات کے مطابق سرکاری عمارتوںکی تزئین و آرائش کا کام سی ڈی اے اور پاک پی ڈبلیو ڈی کرتی ہے اور وزارت خارجہ خود یہ کام کرانے کی مجاز نہیںہے اور یہ اخراجات قواعد کی خلاف ورزی ہے ۔ آڈٹکی جانب سے وزارت خارجہ کے اس اقدام کو کمزور منیجمنٹ قرار دیا ہے اور وزارت خزانہ سے اس کو ریگولرائز کرانے کی ہدایت کی ہے ۔