لاہور(اشرف مجید)غیر ملکی کمپنی اوپس کے وہیکل انسپکشن سرٹیفکیٹ سینٹر کا کمپیوٹر و ٹیکنیکل سسٹم جواب دے گیا ،میٹرو بسوں سمیت انٹر سٹی بسوں کے فٹنس ٹیسٹ نہیں ہو سکے ، ڈرائیوروں کو روزے کی حالت میں صبح 7بجے سے دوپہر تین بجے تک خوار کر کے واپس بھجوا دیا گیا ،جبکہ سٹیشن مینجر،لین چیف اور ٹیکنیکل مینجر سمیت تمام عملے کی جانب سے الٹا ڈرائیوروں سے بد تمیزی ،بسیں روٹوں پر نہ چلنے کی وجہ سے کمپنیوں کو لاکھوں روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑا،صورت حال کا علم ہونے کے باوجود محکمہ ٹرانسپورٹ کے افسران نے بھی خاموشی اختیار کر لی ،تفصیلات کے مطابق سابق حکومت کی جانب سے غیر ملکی کمپنی اوپس کے تعاون سے شروع کئے جانے والے وہیکل انسپکشن سرٹیفکیٹ سسٹم کے ٹیکینکل اور کمپیوٹر سسٹم میں خرابیاں پیدا ہونا شروع ہو گئی ہیں جبکہ ٹیکنیکل سٹاف نہ ہونے کے باعث ان خرابیوں کو دور کرنے میں متعلقہ کمپنی مکمل طور پر ناکام ہو گئی ہے گزشتہ روز کالا شاہ کاکو وکس سینٹر پر صبح 7بجے میٹرو بس نمبر 32اور36 سمیت متعدد بس کمپنیوں کی درجنوں بسوں اور ٹرالوں کی بڑی تعداد فٹنس کے لئے پہنچ گئی لیکن پہلی گاڑی جب بریک ٹیسٹ اور الائنمنٹ کی جگہ پہنچی تو معلوم ہوا کہ بریک ٹیسٹ کرنے والے الات میں گزشتہ رات سے ہی ٹیکینکل خرابی پیدا ہو چکی تھی جبکہ کمپیوٹر بھی خراب تھے لیکن سٹیشن مینجر سہیل جنجوعہ ،لین چیف ریحان ادریس نے اس بارے ہیڈ آفس کو آگاہ ہی نہیں کیا تھا گزشتہ روز جب ٹیکینکل مینجر پنجاب قاسم رضا نے چیکنگ کی تو انکی سمجھ میں کچھ نہیں آ رہا تھا لہذا پہلے تو انہوں نے خرابی دور کرنے کی بجائے خاموشی اختیار کی اور تمام گاریوں کے ڈرائیوروں کو کہا کہ وہ انتظار کریں خرابی دور ہونے کے بعد کام شروع کیا جائے گا لیکن کئی گھنٹے گذرنے کے بعد جب بریک اور الائنمنٹ والی جگہ کو ٹھیک کرنے کے لئے کوئی سٹاف نہ آیا تو ڈرائیوروں کی جانب سے احتجاج شروع کر دیا گیا جس پر تینوں افسران باہر آئے اور انہوں نے ڈرائیوروں کے ساتھ بد تمیزی شروع کر دی اور دھمکیاں دی کہ ایسا کرنے سے انکی گاڑیوں کو فیل کر دیا جائے گا جس پر انکی تلخ کلامی ہوتی رہی ، ،ذرائع کے مطابق بس کمپنیوں کے مالکان کی جانب سے کالا شاہ کاکو سینٹر کی انتطامیہ کی جانب سے کئے گئے سلوک اور اپنے ہونے والے نقصان بارے شکایات بھی کیں ،میٹرو بس کمپنی البیراک کے مینجر نے روزنامہ 92نیوز گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انکی دو بسیں صبح سے فٹنس کروانے گئیں جنہیں بغیر فٹنس کے ہی واپس بھجوا دیا گیا ہے جس بارے ہم نے ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کو بھی آگاہ کر دیا ہے ،ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے جی ایم عذیر نے روزنامہ 92نیوز کو بتایا کہ وکس سینٹر میں آنے والی خرابی کے بارے میں انہیں آگاہ نہیں کیا گیا ہے اگر کمپنی کو کوئی نقصان ہوا ہے تو وہ ضرور درخواست دے کارروائی ہو گی ،جبکہ اوپس کمپنی کے ٹیکینکل مینجر پنجاب قاسم رضا نے بتایا ہے کہ خرابی آنا معمولی بات ہے جسے جلد دور کر لیا جائے گا لیکن محکمہ ٹرانسپورٹ کے افسران کو چائیے کہ وہ ہماری کمپنی کے ایم ڈی محمد وسیم کو ٹیکینکل سٹاف بڑھانے پر زور دیں کیونکہ سٹاف کی کمی کے باعث سارا دن سسٹم درست نہیں کیا جا سکا ہے ۔