پاکستان کی سربراہی میں اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی کی پیش کردہ قرار داد کو اکثریت سے منظور کر لیا گیا ہے۔ اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب نے قرار داد کے حوالے سے اپنے خطاب میں کہا کہ اس قرار داد میں 15مارچ کو اسلامو فوبیا ڈے منانے کا ذکر ہے۔سابق وزیر اعظم عمران خاں کی کاوشوں سے اسلامو فوبیا کے خلاف عالمی برادری بیدار ہوئی اور انہوں نے مذہب کے نام پر پرتشدد کارروائیوں کی حوصلہ شکنی کے لئے اقدامات اٹھانا شروع کر دیے۔سب سے پہلے اقوام متحدہ نے اسلامو فوبیا کے خلاف 15مارچ کا دن مقرر کیا تھا،جس کے بعد اب اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی نے بھی 15مارچ کو بطور اسلامو فوبیا کے خلاف منانے کا اعلان کیا ہے۔یقینی طور پر یہ پاکستان اور اسلامی قوتوں کی جیت ہے کیونکہ بعض دین بیزار قوتیں تقسیم اور انتشار پیدا کر کے لڑائی جھگڑا کراتی ہیں۔ زمانہ قریب میںجیسے نیوزی لینڈ میں ہوا تھا جبکہ اس کے علاوہ بھی قرآن مجید جیسی مقدس کتاب کی بے حرمتی کر کے مسلمانوں کے جذبات مجروح کرنے کی کوشش کی گئی۔اگر مسلم امہ کا آپس میں اتفاق و اتحاد ہو تو دنیا کی کوئی طاقت بھی اسلام اور اس کی مقدس ہستیوں کے خلاف زہر اگلنے کی طاقت نہیں رکھتی۔لہٰذا مسلم امہ کو اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا چاہیے تاکہ وہ اسلامو فوبیا کو شکست دے سکیں ۔