اسلام آباد (نیٹ نیوز )دوپاکستانی طلبہ نے کروناوائرس کی جلد تشخیص کیلئے سسٹم ڈیٹیکٹر بنایاہے جو پھیپھڑوں کے کمپیوٹڈ ٹومو گرافی (سی ٹی سکین) سے وائرس کو شناخت کرلے گا۔غلام اسحٰق خان انسٹیٹیوٹ صوابی میں زیر تعلیم مکینکل انجینئر محمد علیم اور ان کے ساتھی کمپیوٹر انجینئرنگ کے طالب علم راہول راج نے یہ آلہ بنایا ہے ۔طلبہ کا کہنا ہے کرونا وائرس بہت تیزی سے پھیل رہاہے ائسلے انہوں نے وائرس کی تشخیص کیلئے درکار کِٹس کی کمی کو مدنظر رکھتے ہوئے آرٹیفیشل انٹیلی جنس ٹول سے مدد لینے کا فیصلہ کیا۔ان کا دعویٰ ہے ان کے بنائے گئے ماڈل کے ذریعے پھیپھڑوں کے سی ٹی سکین کرکے کروناوائرس کی موجودگی کی 92 فیصد تک درست تصدیق ہوسکتی ہے اور یہ عمل صرف 10سے 20 سیکنڈز میں مکمل ہوجائے گا۔