اسلام آباد (وقائع نگار،خصوصی نیوز رپورٹر) فنانشل ایکشن ٹاسک فورس(ایف اے ٹی ایف) کا اجلاس13 سے 18 اکتوبر تک پیرس میں ہوگا۔ وفاقی وزیر اقتصادی امور ڈویژن حماد اظہر پاکستانی ٹیم کی قیادت کریں گے ۔ ایف اے ٹی ایف اجلاس کیلئے پاکستان نے اپنی دستاویزات پیش کردی ہیں۔ کالعدم تنظیموں کی فنڈنگ روکنے کے جامع اقدامات بھی رپورٹ کا حصہ ہیں۔ایف اے ٹی ایف کی جانب سے پاکستان سے منی لانڈرنگ سے متعلق مزید سوالات پوچھے گئے تھے ، پاکستان پیرس اجلاس میں جواب پیش کرے گا۔ اپنے جواب میں پاکستان کی جانب سے منی لانڈرنگ اور تخریب کاروں کی معاونت کرنے والے اکاؤنٹس اور اثاثوں کے بارے میں تفصیلات کی وضاحت کی جائے گی ۔ خیال رہے ایف اے ٹی ایف کا گزشتہ اجلاس ستمبر میں ہوا تھا جس میں پاکستان نے مؤثر انداز میں اپنا کیس پیش کیا۔ ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ پر پاکستان کے بارے میں حتمی فیصلہ رواں اجلاس میں ہوگا۔ گزشتہ اجلاس میں پاکستان نے مختلف معاملات پر پیشرفت سے متعلق ذیلی گروپ کو آگاہ کیا تھا جبکہ پاکستان نے اقدامات پر مبنی رپورٹ بھی جمع کرائی تھی۔ گزشتہ اجلاس میں پاکستان اورایف اے ٹی ایف حکام میں براہ راست مذاکرات بنکاک میں ہوئے تھے ۔ بات چیت کے ایجنڈے میں سرفہرست دہشتگردی اور ٹیررازم فنانسنگ کے خطرات شامل تھے ۔