سی سی پی او کی ہدایت پر لاہور پولیس کے افسروں اور جوانوں کی حفاظت کے لئے 40ہزار سے زائد ماسک، 15ہزار سینی ٹائیزر کی بوتلیں، 50ہزار دستانے، 500عینکیں اور پانچ ہزار کورونا کٹس تقسیم کی گئی ہیں۔ اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ اس مشکل وقت میں پاک فوج اور پولیس کے اہلکار اپنے فرائض پابندی کے ساتھ سرانجام دے رہے ہیں۔ ناکوں پر کھڑے جوانوں کا ہر قسم کے شہری سے واسطہ پڑتا ہے۔ بعض شہریوں نے ماسک بھی نہیں پہنے ہوتے جس بنا پر اس متعدی وائرس کے پھیلنے کے زیادہ امکانات ہوتے ہیں۔ اس لئے سی سی پی او نے اپنے عملے کی حفاظت کے لئے بہتر انتظامات کر کے فرض شناس افسر ہونے کا ثبوت فراہم کیا ہے۔ ہوٹلوں کی بندش کے باعث ناکوں پر کھڑے پولیس ملازمین کو کھانے کے لئے کافی مشکلات کا سامنا ہے۔ اس لئے مخیر حضرات اپنے اپنے علاقے میں ہماری حفاظت کے لئے چوکس کھڑے جوانوں کے کھانے کا بھی انتظام کریں تو بہتر ہو گا۔ اسی طرح ٹریفک پولیس اہلکار بھی کٹس کے بغیر کھڑے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔ آجکل ویسے بھی چالانوں میں تیزی آ چکی ہے۔ ہر چوک پر کھڑے اہلکار نے درجن بھر جوانوں کو ایک جگہ پر کھڑے کر رکھا ہوتا ہے۔ اس لئے سی ٹی او نے اگر انہیں شہریوں کے چالان کرنے کا حکم دے رکھا ہے توانہیں کٹس بھی فراہم کریں تاکہ وہ بھی اپنی حفاظت یقینی بنا سکیں۔ اسی طرح ہر ضلع کا ڈی پی او بھی اپنے ماتحت ملازمین کی حفاظت یقینی بنائے تاکہ یہ جوان اس مشکل وقت میں تندہی سے اپنے فرائض سرانجام دے سکیں۔