BN









کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


علامہ یوسف القرضاوی ایک فکری رہنما

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
عبدالرفع رسول
26ستمبر2022ُٰپیر کے روزعرب دنیا کی فلسطین کی حماس اورمصرکی اخوان کی اسلامی تحریکوں کے فکری راہنما عالم اسلام کے معروف اسلامی اسکالر اور فقیہ علامہ ڈاکٹر یوسف القرضاوی داعی اجل کولبیک کہہ گئے۔علامہ یوسف القرضاوی کا وطنی تعلق مصر سے تھا لیکن گزشتہ چار دہائی سے آپ قطر میں قیام پذیر تھے ،ایک سوسے زائد معرکۃ الآراء کتابوں کے مصنف ہیں ،اکثر کتابوں کے ترجمے دنیا کی مختلف زبانوں میں شائع ہوچکے ہیں۔پوری دنیامیںآپ کے معتقدین ومحبین کا ایک بڑا حلقہ ہے جو عرب ممالک سے لے کر یورپ ،امریکہ اور برصغیر تک پھیلا ہوا ہے ، آپ
مزید پڑھیے


عوام کا مقدمہ

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر جام سجاد
پاکستان ادارہ ِ شماریات کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ ہفتے مہنگائی نے سارے ملکی ریکارڈ توڑدیے ہیں اور 42.3فیصد اضافہ کے ساتھ ملک کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ دوسری خبر کے مطابق نوے فیصد بلوچستان زیر ِ آب آچکا ہے۔ پنجاب کے مغربی اضلاع میں سیلاب کی تباہ کاریوں کی بدولت کئی بستیاں صفحہ ہستی سے مٹ چکی ہیں۔ سوشل میڈیا پر ایک تصوریر وائرل ہورہی ہے جس میں ایک شخص سیلابی ریلے کی زد میں آکر جاں بحق ہوچکا ہے۔دونوں ہاتھ مٹی کے اوپر جب کہ پورا وجود مٹی کے
مزید پڑھیے


سیلاب زدگان کی امداد کیلئے الخدمت کی خدمات

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
ریاض احمد چودھری
پاکستان میں شدید بارشوں اور سیلاب کی وجہ سے بڑے پیمانے پر تباہ کاریاں ہوئی ہیں۔ کے پی کے، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے علاقے سیلاب سے شدید متاثر ہوئے۔ جبکہ سندھ تو تقریباً سارا کا سارا ہی سیلابی پانی میں ڈوبا ہوا ہے۔ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھاری (این ڈی ایم اس)کے مطابق پورے ملک کے آفت زدہ 81 اضلاع میں 33 ملین سے زائد افراد متاثر ہوئے۔جن میں 1606 افراد جاں بحق، 12863 زخمی اور 1067241 مویشی ہلاک ہوئے۔ گیلپ پاکستان کے حالیہ سروے کے مطابق سیلابی علاقوں میں الخدمت فاؤنڈیشن نے بروقت ایمرجنسی بحالی کی سرگرمیاں شروع کر
مزید پڑھیے


تْو چل میں آیا۔۔۔۔!

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
مریم ارشد
ہمارے بچپن میں پہلیاں بْوجھنے اور بیت بازی کھیلنے کا بہت رواج تھا۔ آج ایک پہیلی یاد آ رہی ہے۔ ’’تْو چل میں آیا‘‘۔ اس کا جواب ہوتا تھا ’’دروازہ‘‘۔ چونکہ دروازہ کے دو پٹ ہوتے ہیں۔ پہلے ایک پَٹ بند ہوتا ہے پھردوسرا۔ یاد رکھیے دروازہ ہمیشہ اند رسے کْھلتا ہے۔ چاہے محبت کا ہو یا عداوت کا۔ ایک گرما گرم خبر ہے کہ سابق وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار صاحب بالآخر کمر درد سے نجات پانے کے بعد واپس وطن عزیز میں تشریف لا چکے ہیں۔ آئیے! حضور، قدم رنجہ فرمائیے! عوام آپ کو پخیر راغلے کہتے ہیں۔ دیدہ
مزید پڑھیے


’’میں کھٹکتا ہوں دل یزداں میں کانٹے کی طرح‘‘

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
افتخار حسین شاہ
اپنے ملک کے جو حالات ہو چکے ہیں وہ کسی سے ڈھکے چھپے نہیں۔ جس کا بس چلتا ہے وہ یہ ملک چھوڑ کر چلا جاتا ہے اور پھر واپس آنے کا نام ہی نہیں لیتا ۔ ملک پر طاقتور گروہوںکا قبضہ ہو چکا ہے، جن کے خاندان در خاندان یہاں حکومت کرتے ہیں، ہر ہر طریقے سے دولت لوٹتے ہیں اور پھر وہ یہاں سے لوٹی دولت ترقی یافتہ اور خوشحال ممالک میںمنتقل کر کے اپنے خاندانوںکے لیے اچھے اچھے کاروبار establish کرتے ہیں اور پھر وہاں زندگی کے مزے لوٹتے ہیں۔ذہن میں رہے کہ طاقتور گروہوںسے مراد
مزید پڑھیے


بھٹو یا عمران

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
اقتدارجاوید
ایک سیمینار جس کا موضوع " تعلیم اور ہنر ساتھ ساتھ" کا انعقاد شہر کی ایک دانش گاہ میں انعقاد پذیر ہوا۔یہ اطلاع پی ٹی آئی نے اپنے آفیشیل پیج پر ٹوئٹ کے ذریعے ایک دن پہلے شئیر کر دی تھی۔اس سیمینار میں حکومت پنجاب اس کا ہائر ایجوکیشن شعبہ پی آئی ٹی بی آن بورڈ تھے۔یہ ہمارا موضوع نہیں تا ہم وہاں ایک حقیقت واضح ہو گئی۔گورنمنٹ کالج یونیورسٹی میں عمران خان کے خطاب نے ثابت کر دیا ہے کہ وہ بھٹو کی طرح طلبا میں بھی انتہائی مقبول ہیں۔یہ دانش گاہ ملک کے ذہین ترین اور اساتذہ کا
مزید پڑھیے


کشمیرـ: 5 اگست 2019 کے بعد

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
آصف محمود
اردو میں لکھنے والے بزدل ہیں یا بد دیانت؟ احباب ناراض نہ ہوں ، میں وضاحت کر دوں کہ ایک تو یہ سوال میرا نہیں ، یہ ممبئی اردو نیوزکے مدیر شکیل رشید کا ہے ۔ دوسرا اس کے مخاطب پاکستانی اہل قلم نہیں بلکہ بھارتی دانشور ہیں۔ شکیل رشید نے یہ سوال کشمیر میں ہونے والے بھارتی اقدامات کے تناظر میں اٹھایا ہے کہ اس ظلم پر اردو لکھنے والے گونگے کیوں ہو گئے؟ وہ بزدل ہیں یا بد دیانت۔ سوال میں البتہ معنویت اتنی ہے کہ آپ اسے میرا سوال بھی سمجھ سکتے ہیں اور آپ اس سوال
مزید پڑھیے


سیلاب زدہ علاقوں کا سروے اور متاثرین کی حالت زار

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
سرور باری
ناقص حکمرانی اور اشرافیہ کی اجارہ داری نے پاکستان میں موسمیاتی تبدیلی کے شدید اثرات کو بڑھاوا دیا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ حکمران جماعتوں کے پاس سیلابی آفت کے نقصانات کے تدارک کیلیے وقت نہیں، کیونکہ ان کی ترجیح اپنے اپنے اقتدار کی جنگ ہے۔حکمران طبقات اور سیاسی جماعتوں کی طرف سے بے اعتنائی کا یہ رویہ عارضی نہیں، اس رویئے کا مظاہرہ پالیسی کی تشکیل اور مفاد عامہ کے منصوبوں کو نظر انداز کئے جانے میں بھی ہوتا ہے۔ عام آدمی ریاست سے مایوس ہو رہا ہے، حکومتین ریاست کا چہرہ ہوتی ہیں ۔ریاست کا چہرہ حیران
مزید پڑھیے


ٹرانسجینڈر ایکٹ: تاریخ، تدوین، حقائق ……(2)

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
اوریا مقبول جان
سیکولر، لبرل اور روشن خیال نظریات کی آبیاری یوں تو کیمونزم کے زوال سے شروع ہوئی تھی، لیکن اس کو ملکی سطح پر فروغ پرویز مشرف دور کی حکومتی آشیرباد سے ملا۔ اس حکومتی سرپرستی کی وجہ سے سیاسی قیادت میں ملحد، سیکولر، لبرل افراد کھل کر سامنے آنے لگے۔ اسی دور میں پاکستان کی تمام سیاسی پارٹیوں کے اراکین ٹرانسجینڈر کمیونٹی اور "LGBT" کے حقوق کے حوالے سے ہیومن رائٹس کمیشن، عورت مارچ اور دیگر تنظیموں کے ہمدرد کے طور پر مسلسل کام کرتے نظر آنے لگے۔ پاکستان میں مغربی ایجنڈے اور بیرونی فنڈنگ سے کام کرنے والی این
مزید پڑھیے


ٹرانس جینڈر بل کی غیر شرعی شقیں

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
اداریہ
اسلامی نظریاتی کونسل نے ٹرانس جینڈر بل کی کئی شقوں کو غیر شرعی قرار دیتے ہوئے حقیقی طور پر مخنث افراد کے حقوق کے تحفظ کی ضرورت پر زور دیا ہے۔بلا شبہ اسلامی نظریاتی کونسل کی یہ دلیل بڑی مستحکم ہے کہ ٹرانس جینڈر افراد کے بارے میں ٹرانس جینڈرز پرسنز پروٹیکشن آف رائٹس ایکٹ کا جائزہ لینے کیلئے اسلامی نظریاتی کونسل‘ علماء ،ماہرین قانون وطب پر مشتمل کمیٹی قائم کی جانی چاہیے جو ٹرانس جینڈرز کے بارے میں موجودہ قانون کا تفصیلی جائزہ لے کر اس مسئلے کے ہر پہلو کو سامنے رکھتے ہوئے جامع قانون سازی کرے۔ہم سمجھتے
مزید پڑھیے


پنجاب کے سیلاب متاثرین وفاق کی مدد سے محروم

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
اداریہ
وزیر اعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے سلاب زدگان کے لئے آنے والی امداد میں سے پنجاب کو کچھ نہیں دیا۔سیلاب متاثرین کے گھر بنانے کے لئے وفاقی حکومت کی طرف سے حصہ بھی نہیں دیا گیا۔ حالیہ سیلاب سے سندھ اور بلوچستان کی طرح پنجاب اور خیبر پی کے بھی متاثر ہوئے ہیں لیکن وفاقی حکومت کا امداد اور متاثرین کی بحالی کے لئے پنجاب حکومت کی مدد نہ کرنا باعث افسوس ہے۔وفاقی حکومت کے اس رویے سے صوبہ پنجاب اور وفاق کے درمیان تفریق مزید بڑھے گی۔ جس کے باعث ملک و
مزید پڑھیے


پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں کمی کا انتظار

جمعرات 29  ستمبر 2022ء
اداریہ
تیل کی بین الاقوامی قیمتوں میں پچھلے کئی روز سے اتار آ رہا ہے جس سے عام آدمی کو امید بندھی ہے کہ حکومت تیل کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ عوام کو منتقل کرنے میں تاخیر نہیں کرے گی ۔روپے کے مقابل ڈالر کے نرخ کم ہونے سے یہ اقدام بلا جواز نہیں رہا ۔بدھ کے روز برینٹ کام تیل کے نرخ 86.23 ڈالر فی بیرل رہے۔یورپ کی ضروریات کے لئے متبادل ذرائع سے گیس اور تیل کے انتظام کی کوششوں میں ابتدائی کامیابی کے بعد توقع کی جارہی ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کے نرخ مزید
مزید پڑھیے


مفاہمت کے بادشاہ نوابزادہ نصرا للہ خان

بدھ 28  ستمبر 2022ء
ظہور دھریجہ
26 ستمبر کو معروف سیاستدان نوابزادہ نصراللہ خان مرحوم کی برسی منائی گئی۔ خان گڑھ میں منعقدہ ہونیوالی تقریب میں نوابزادہ منصور علی خان نے کہا کہ سیاسی خدمات کے پیش نظر نوابزادہ نصراللہ خان کو بابائے جمہوریت اور مفاہمت کے بادشاہ کا لقب حاصل ہوا۔ مقررین نے نوابزادہ نصراللہ خان کی خدمات کو خراج عقید ت پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج ہم ان کو یاد کرتے ہیں ۔ انہوں نے 23 مارچ 1940 ء کو قرارداد پاکستان کے جلسے میں شرکت کی اور آزادی کیلئے عملی جدوجہد کی ۔نواب زادہ نصر اللہ خان 1918 ء میں
مزید پڑھیے


اسحاق ڈار کون ہیں؟

بدھ 28  ستمبر 2022ء
اسداللہ خان
اسحاق ڈار کے وزیر خزانہ بننے کے حوالے سے بڑی سادگی کے ساتھ یہ دلیل دی گئی ہے کہ وہ کسی بھی عدالت سے سزا یافتہ نہیں ہیں لہذا انہیں وزیر خزانہ بنائے جانے میں کوئی ہرج نہیں ۔ لیکن دلیل دینے والوں نے یہ نہیں بتایا کہ جب کوئی مسئلہ ہی نہیں تھا تو اپنے ہی دور حکومت میں اپنے ہی وزیر اعظم کے جہاز میں انہیں کیوں بھاگنا پڑا تھا،پھر پانچ سال تک وہ کیوں جلا وطنی کاٹتے رہے،اپنے اوپر اشتہاری کا داغ لگوا لیا لیکن واپس نہیں آئے ۔ آج آئے تو پھر وزیر اعظم ہی کے
مزید پڑھیے


چیئرمین الخدمت فاؤنڈیشن سے خصوصی گفتگو…(2)

بدھ 28  ستمبر 2022ء
سعدیہ قریشی
عبدالشکور صاحب کا کہنا ہے کہ صرف الخدمت فاؤنڈیشن یا چند اور فلاحی ادارے ہی متاثرین کی بحالی کا کام نہیں کرسکتے ، یہ کام ہمیں مل کر کرنا ہوگا۔ تباہی بہت بڑے پیمانے پر ہوئی ہے اب تک صرف 30 سے 35 فیصد متاثرین تک ہی ہم پہنچ پائے ہیں ابھی بے شمار ایسے متاثرین ہیں جن تک امداد نہیں پہنچ پائی۔ بیرون ملک سے بہت امداد آرہی ہے مگر سرکار اپنے تمام تر انفراسٹرکچر کے باوجود موثر طریقے سے متاثرین تک نہیں پہنچ پارہی۔ آپ اس بارے
مزید پڑھیے