BN

کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


جہالت اور نا اہلی

اتوار 28 جون 2020ء
اوریا مقبول جان
عمران خان کی خود پسند اور کرشماتی شخصیت کے اقتدار میں آنے سے پہلے پاکستان کا ہر باشعور شخص یہ خیال کرتا تھا کہ کرپشن اور بددیانتی نے پاکستانی معیشت ومعاشرت کو دیمک کی طرح چاٹ کر کھوکھلا کر دیا ہے اور اگر کچھ دیر اور ایسا ہی رہا تو یہ عمارت ایک دن اچانک دھڑام سے زمین بوس ہو جائے گی۔ لیکن عمران خان کی دو سالہ حکومت نے یہ راز بھی باشعور لوگوں پر آشکار کردیا کہ کرپشن اور بددیانتی سے تو شاید ملک کچھ سال اور چلتا رہتا لیکن جہالت اورنا اہلی اس کا وہ حال کردے
مزید پڑھیے


زرتاج گُل نے راج بی بی کی چیخ کیوں نہ سنی؟

اتوار 28 جون 2020ء
احمد اعجاز
2018ء کے عام انتخابات میں،جب ڈی جی خان کے حلقہ این اے 191 سے زرتاج گل منتخب ہوتی ہے،تو یہ غیر معمولی واقعہ بن جاتا ہے۔اس حلقہ سے روایتی سرداروں کو مات دینا، وہ بھی ایک خاتون اُمیدوارکی حیثیت سے ،ملکی انتخابی تاریخ کا ایک واقعہ قراردیاجاسکتا ہے۔یہ حلقہ ڈی جی خان کی شہری آبادی پر محیط ہے ، شہر کے علاوہ سخی سرور، فورٹ منرو اور رونگھن کے علاقے بھی اس میں شامل ہیں ۔اس حلقہ کی شہری آبادی جہاںکھوسہ ،لغاری اور دوسرے اہم اور بڑے خاندانوں کو ووٹ دیتی آئی ہے‘ وہاں مجموعی پارٹی فضا کو بھی
مزید پڑھیے


سید منور حسن کا انتقال

اتوار 28 جون 2020ء
اداریہ
ماعت اسلامی کے سابق امیر سید منور حسن طویل علالت کے بعد حرکت قلب بند ہو جانے سے 79 برس کی عمر میں انتقال کرگئے۔ سید مودودی نے اصلاح معاشرہ اور اسلامی نظام کے قیام کے لیے جس عظیم مشن کا بیڑا اٹھایا اس نے اپنے عہد کے ہزاروں نوجوانوں کے دلوں میں ایک صبح نو کی جوت جگا دی تھی۔سید منور حسن بھی اس سپاہ کے پرچم برداروں میں سے ایک تھے۔ دھیمے انداز میں دل میں اتر جانے والی بات کہنے کا سلیقہ، اپنے موقف کے حق میں ٹھوس دلائل‘ اعلیٰ انتظامی صلاحیتیں‘ کھری اور دو ٹوک بات
مزید پڑھیے


فواد چودھری سے جہانگیر ترین تک

اتوار 28 جون 2020ء
ناصرخان
سرمایہ دارانہ دنیا کے بنائے ہوئے دانش وروں کا خیال ہے کہ بدترین جمہوریت بہترین آمریت سے بہتر ہوتی ہے۔ یہ بالکل بوگس اور فلاپ شدہ ڈاکٹرائن ہے۔ یہ بنائی اس لیے گئی کہ جب عامیوں کا استحصال سے دم گھٹنے لگے تو الیکشن کے ذریعے پریشر ککرسے بھاپ نکال کر اسے دوبارہ آگ پر رکھ دیا جائے حکمران طبقات کے لیے نیا کڑاہی گوشت بننے کے لیے۔ وہ کیا کہتے ہیں کہ عزیز اتنا ہی رکھو کہ جی سنبھل جائے۔ مگر وہ ملک جسے پاکستان کہتے ہیں کا جی سنبھل نہیں رہا۔ بات بگڑ رہی ہے ۔ کیوں اور
مزید پڑھیے


کشمیر کو دوسرا فلسطین بنانے کا مذموم منصوبہ

اتوار 28 جون 2020ء
اداریہ
اہور سے روزنامہ 92نیوز کی رپورٹ کے مطابق بھارت نے اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کی معاونت سے کشمیر کو دوسرا فلسطین بنانے کے منصوبے پر کام شروع کر دیا ہے اور پہلے مرحلہ میںکشمیر میں بھارت کے مختلف شہروں سے آ نیوالے ہندوئوں کو مقبوضہ کشمیر کا ڈومیسائل دے کر انہیں وہاں کا شہری بنایا جا رہا ہے۔ اس سلسلہ میں قریباً تین لاکھ ہندوئوں کو مقبوضہ کشمیر کی شہریت دی جا رہی ہے۔ دوسرے مرحلہ میں 4لاکھ ہندوئوں کو شہریت دی جائیگی۔اس میں کوئی شبہ نہیں کہ یہود و ہنود نے دنیا کے کئی خطوں میں مسلمانوں کے خلاف
مزید پڑھیے


پٹرولیم نرخوں میں اضافہ اور حکومتی گرفت

اتوار 28 جون 2020ء
اداریہ
وفاقی حکومت نے آئیل مارکیٹنگ کمپنیوں کے مافیا کے سامنے گھٹنے ٹیکتے ہوئے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں فی لیٹر25روپے 58پیسے تک کے اضافہ کی منظوری دیدی ہے۔ ملک میں کاروباری مندی‘بے روزگاری اور بے قابو ہوتی مہنگائی کی موجودگی میں تیل مصنوعات کی قیمتوں میں یک لخت اس قدر اضافے نے عوامی سطح پر حکومتی فیصلے پر شدید ناراضی اور تنقید کا دروازہ کھول دیا ہے۔ وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق پٹرول کی نئی قیمت 100روپے 10پیسے مقرر کی گئی ہے ڈیزل کی قیمت 21روپے 31پیسے فی لٹر اضافے کے بعد 101روپے 46پیسے‘ مٹی
مزید پڑھیے


ہم نے عمران خان کی حمایت کیوں کی؟

اتوار 28 جون 2020ء
محمد عامر خاکوانی
آج کل ہر اس شخص سے یہ سوال پوچھا جا رہا ہے کہ آپ نے عمران خان کی حمایت کیوں کی تھی؟پچھلے دو برسو ں میں تحریک انصاف اور اس کے قائد نے اس برے طریقے سے اپنے ووٹرز، کارکنوں، حامیوں اور حسن ظن رکھنے والوں کو مایوس کیا ، جس کی پاکستانی تاریخ میں کوئی دوسری مثال نہیں ملتی۔ بھٹو صاحب کے بارے میں یہ کہا جاتا ہے کہ انہوں نے اپنے حامیوں کے ایک حلقے کو مایوس کیا۔ بات درست ہے، مگر بھٹو صاحب نے بہت کچھ ایسا بھی کیا جو ان کے حامی چاہتے تھے۔ 1977ء کے
مزید پڑھیے


بے نیازی حد سے گزری بندہ پرور کب تلک

اتوار 28 جون 2020ء
ارشاد احمد عارف
مہینہ ختم ہونے سے چار دن قبل پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ موجودہ حکومت کا وہ احمقانہ اقدام ہے جس کا دفاع عمر ایوب اور ندیم بابر کے سوا کوئی کر سکتا ہے نہ کرے گا‘ مجھے گزشتہ شب پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں ہوشربا اضافے کی اطلاع ملی تو کافی دیر تک یقین نہ آیا‘ یقین آتا بھی کیسے کہ یکم جون سے چھبیس جون تک وزیر اعظم عمران خان اور حکومت کے ترجمانوں نے بار بار قیمتوں میں کمی کا کریڈٹ لیا اور قلت و گرانی کے ذمہ دار مافیا کو سخت سزا دینے کی نوید سنائی‘
مزید پڑھیے


بے یقینی

هفته 27 جون 2020ء
سجا د جہانیہ
بہت دنوں کی بات ہے‘ اتنے بہت دنوں کی کہ اب شمار کرنا چاہوں تو نہ کرسکوں۔ تب بڑا ہی سکون تھا، اطمینان اور یکسوئی۔ تب مجھے یہ بھی پتہ نہ تھا کہ شمار کرنا کیا ہوتا ہے، گنتی کسے کہتے ہیں۔ دنوں کا تعلق وقت سے ہے نا‘ جب وقت کا ہی نہ ہو تو دنوں اور ان کے شمار کا کیا سوال۔۔؟ وہ وقت سے خالی جگہ تھی۔ نہ صبح تھی‘ نہ شام‘ رات اور دوپہر۔ نہ سورج‘ چاند‘ تارے‘ نہ ان کے طلوع وغروب کا جھنجٹ۔ یہ زمین بھی تو نہ تھی جس کی پیٹھ پر ہمیں
مزید پڑھیے


مثالی پولیس کی مثالی سزا

هفته 27 جون 2020ء
محمد حسین ہنز ل
ہم رائو انوار کے مظالم کارونا رو رہے تھے لیکن عامر تہکالی نامی نوجوان لڑکے کی عزت نفس کا جنازہ نکال کر پشاور پولیس نے رائوانوار کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔رائو انوار نے کراچی میں جعلی پولیس مقابلوں کے دوران نقیب اللہ محسود سمیت سینکڑوں بے گناہ لوگوں کوبے دردی سے قتل کرکے یہ پیغام دیا تھاکہ پولیس کہیں بھی اورکسی وقت بھی ایک بے گناہ انسان کوجان سے مارسکتی ہیں ۔تاہم پچھلے دنوں پشاور میںعامر تہکالی کی عزت پر حملہ کرکے مملکت خداداد کی پولیس نے یہ ثابت کردیا کہ اس وردی میں ملبوس اہلکار بے گناہ انسان کی
مزید پڑھیے


سید منور حسن

هفته 27 جون 2020ء
سجاد میر
میں یہ کالم نہیں لکھ پائوں گا‘ مگر مجھے لکھنا ہے‘ ہر صورت لکھنا ہے۔ زندگی میں یہ دن بھی آنا تھا کہ اپنے منور صاحب کی رحلت پر کالم لکھنا پڑ رہا ہے۔ سب جانتے ہیں کہ مرا ان کا ذاتی تعلق تھا اور بہت گہرا تھا۔ تحریک اسلامی کی تاریخ میں انہیں ایک غیر معمولی حیثیت حاصل رہے گی۔ انہوں نے اپنی امارت کے دوران ایسے سوال اٹھا دیے جن کے جواب اسلامیان پاکستان ہی نہیں پورے عالم اسلام کے سر ہے۔ اپنے بھی ناراض ہوئے۔ سیاست مصلحت کیش ہوتی ہے۔ کہنے والے یہ بھی کہتے تھے کہ
مزید پڑھیے


سرکاری یونیورسٹیوں کو سیاسی بنانے کا منصوبہ

هفته 27 جون 2020ء
اسداللہ خان
یہ رونا تو ہم روتے ہی رہتے ہیں کہ پبلک سیکٹر یونیورسٹیزتباہی کے دہانے پر پہنچ رہی ہیں۔ ماہرین تعلیم اکثر یونیورسٹیز کے کمزور نظام ، اقربا پروری، میرٹ کی خلاف ورزی، بد عنوانی اور غیر قانونی بھرتیوں کے مسئلے کا ذکر کرتے ہوئے تجویز کرتے ہیں کہ یونیورسٹیوں میں سیاسی مداخلت ختم کرتے ہوئے انہیں زیادہ سے زیادہ خود مختار بنایا جائے۔ یوں کمزوریوں کو دور کرنے کے لیے جن باتوں پہ غور ہونا چاہیے تھا وہ یہ کہ2008 کے بعد بننے والی جن یونیورسٹیز کے سنڈیکیٹ کی سربراہی وزیر تعلیم کرتے ہیں انہیں ہٹا کر یہ ذمہ داری
مزید پڑھیے


سید منور حسن: بندہ اچھا تھا

هفته 27 جون 2020ء
آصف محمود
سید منور حسن بھی چل دیے ۔اتفاق دیکھیے ، میری ان سے ایک ملاقات بھی نہیں اور آج ان کی رحلت کی خبر سن کر یہ سمجھ بھی نہیں آ رہی کہ تعزیت کس سے کی جائے؟ اول خیال آیا جماعت اسلامی ہی سے تعزیت کر لی جائے ، جناب سراج الحق سے یا جناب فرید پراچہ سے ، پھر کچھ ایسے ناگفتہ بہ واقعات نے قدم روک دیے جن کا تذکرہ ، ڈر ہے کہیں ، سجدوں سے سجی جبینوں پر شکنیں نہ ڈال دے۔ سید منور حسن ، میری رائے میں سیاست کی دنیا کے آدمی ہی نہیں تھے۔وہ
مزید پڑھیے


لداخ :امارت سے مفلسی کی ایک داستان

هفته 27 جون 2020ء
افتخار گیلانی
خطے کے روابط منقطع ہونے کا سب سے زیادہ نقصان مسلم اکثریتی کرگل ضلع کو اٹھانا پڑا۔ اس کے علاوہ بھارت،پاکستان جنگوں میں اس ضلع کے کئی دیہات کبھی ادھر تو کبھی ادھر چلے آتے تھے۔ 1999ء کی کرگل جنگ کے بعد جب لداخ کے پہلے کور کمانڈر جنرل ارجن رائے کی ایما پر دیہاتوں کی سرکاری طور پر پیمائش وغیرہ کی گئی، تو معلوم ہوا کہ ترتک علاقے کے کئی دیہات تو سرکاری ریکارڈ میں ہی نہیں ہیں۔ اس لئے 2001ء کی مردم شماری میں پہلی بار معلوم ہوا کہ لداخ خطے میں مسلم آبادی کا تناسب 47فیصد ہے
مزید پڑھیے


شیخ صاحب ، یہ آپ نہیں کر سکتے ؟ …(2)

هفته 27 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
وفاقی وزیر ریلوے محترم شیخ رشید کے نام پاکستان کے سب سے بڑے پبلک سیکٹر کے ادارے کے سُدھارکے لئے ایک محبت نامہ لکھا تھا۔ اور اس میں ممتاز بیورو کریٹ نے اپنی کتاب ’’دو مینار‘‘ میں ریلوے کے سنہری دور کے بارے میں جو ارشادات لکھے تھے ،وہ بھی شیخ صاحب کی خدمت میں پیش کردئیے تھے۔ایک زمانہ تھا کہ وزیر ،مشیر ،سرکاری افسروں کی میز پر اخباروں کامینار اُن کے سامنے ناشتے کی میز پر ہوتا ۔ اب سوشل میڈیا کا دور ہے۔ اخبارات اگر آتے بھی ہیں تو سیدھے ردّی کی ٹوکری یا میز پر دھرے رہتے
مزید پڑھیے





کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں

مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ



افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے

رضا رومی
رومی نامہ




سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ





ارشاد محمود
بات یہ ہے

عا بد قر یشی
تجا ہل عا دلا نہ

اثر چوہان
سیا ست نامہ




ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

عابد قریشی
تجاہل عادلانہ

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے


سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
دروا‍‌زہ

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

وسی بابا
باتاں


محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم