BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



یہیں پہ روز حساب ہو گا

اتوار 11  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
مریم نواز شریف کی گرفتاری پر پیپلز پارٹی کی چیخ و پکار فطری ہے‘ بلاول بھٹو سب سے زیادہ پریشان ہیں‘ اپنے والد آصف علی زرداری اور پھوپھی فریال تالپور سے زیادہ‘ بلکہ کہیں زیادہ غصہ انہیں مریم نواز کی گرفتاری پر آیا ہوش اڑا دینے والا غصہ‘ یار لوگ اس کی توجیح اپنے اپنے انداز میں کر رہے ہیں‘ کسی کا خیال ہے کہ پیپلز پارٹی کے نوجوان قائد کو اپنی گرفتاری کا دھڑکا ہے۔ بعض تجزیہ کاروں کے نزدیک پیپلز پارٹی کی قیادت مریم نواز کی باغیانہ تقریروں کو غنیمت سمجھ رہی تھی کہ حکومت اور فوج کے
مزید پڑھیے


کشمیرمزاحمت سے آزاد ہوگا

اتوار 11  اگست 2019ء
عدنان عادل
کشمیر پر پاکستانیوں کے دل اُداس ہیں۔ بھارت کے تازہ اقدام کے بعد لوگوں میں ایک بے بسی کا احساس ہے۔ قوم چاہتی ہے کہ کشمیری بھائیوں کی مدد کیلیے ہماری ریاست اور حکومت نتیجہ خیز اقدامات کریں۔ انہیں ظالم بھارتی سامراج سے آزادی دلائیں۔ پانچ اگست کے بعد پاکستان نے بعض اہم اقدامات کیے۔ پارلیمان کے مشترکہ اجلاس نے بھارتی اقدام کے خلاف متفقہ قرار داد منظور کی‘ حکومت نے بھارت سے دو طرفہ سفارتی تعلقات کی سطح کم کی‘ دونوں ملکوں کے درمیان بس‘ ریل سروس اور تجارت بند کی۔ ان فیصلوں کے ذریعے بھارت سے پاکستانی عوام
مزید پڑھیے


کشمیر ایشو!احساس جرم ۔ کھوکھلے نعرے

اتوار 11  اگست 2019ء
سعدیہ قریشی
10اگست بروز ہفتہ میں یہ کالم لکھ رہی ہوں ٹھیک ایک روز کے بعد 12اگست کو عیدالضحیٰ ہو گی۔ عید کی آمد پر اس کی تیاریاں ہر گھر میں اپنی اپنی بساط اور معاشی حیثیت کے مطابق ہو رہی ہیں بلا شبہ عید خوشیوں کا تہوار ہے۔ اپنوں کے ساتھ مل بیٹھنے کا تہوار ہے۔ لیکن عید کی خوشیوں کے ان لمحات میں کشمیری مسلمانوں پر ٹوٹی ہوئی قیامت نے احساسات میں عجیب سی بے چینی اور ملال پیدا کر دیا ہے۔ بلکہ ملال کی کیفیت بھی کچھ احساس جرم والی ہے۔ ایک طرف کشمیری نوجوان پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے
مزید پڑھیے


اندھیر نگری میں بسنے والو! خدا کو آخر حساب دو گے

اتوار 11  اگست 2019ء
جسٹس نذیر غازی
نہایت بے احتیاط‘ بے سلیقہ ‘ نہ کسی سمت کا تعین ہے نہ کوئی بڑی سوچ بس ایک اندھا دھند خواہش کا سیلاب دل و دماغ کو گھیرے میں لئے ہوئے ہے۔ خواہش ہے کہ بالکل بیمار۔ یاسیت کا شکار اور یاسیت اور خواہش مل کر عقل سے دشمنی کر رہی ہیں اسی لئے کوئی صحت مند خیال جنم ہی نہیں لیتا۔ ہر روز نئے خواب نئے ارادے بیمار ذہن اسی طرح کے حالات میں پروان چڑھتے ہیں۔ بیمار ذہن اپنی خواہشات کو اپنی انا کا امام کرتے ہیں۔ اردگرد نہیں دیکھتے، اگر دیکھتے ہیں تو کنکھیوں سے جائزہ لیتے ہیں
مزید پڑھیے


زندگی اے زندگی

اتوار 11  اگست 2019ء
خاور نعیم ہاشمی
بجائے اس کے کہ میں مقبوضہ کشمیر کو بھارتی اکائی میں شامل کرنے کے شرمناک اقدام پر بلوائے گئے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کی کارروائی پر کچھ لکھوں، مناسب ہے کہ آپ کو مقبوضہ کشمیر کے ایک نوجوان شاعر کے جذبات سے روشناس کرادوں، نوجوان کشمیری شاعر کا یہ کلام کئی سال پرانا ہے اورآج کل انٹر نیٹ پر اسے خوب پذیرائی مل رہی ہے، مقبوضہ کشمیر میں بھارت بہتر سال تک کیا کیا مظالم ڈھاتا رہا؟ یہ شاعری اس کی ہو بہو تصویر ہے، اگر میں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے حوالے سے تصویر کشی کی تو ڈرتا
مزید پڑھیے


کشمیر چیلنج

اتوار 11  اگست 2019ء
محمد عامر رانا
مقبوضہ کشمیر میںنئے انتفادہ نے سر اٹھایا ہے اکثر ماہرین کا خیال ہے کہ نئی صورتحال اور تنازع کے خطہ کے سیاسی اور جغرافیائی منظر نامے پر گہرے اور دوررس اثرات مرتب ہوں گے۔ البتہ عالمی برادری ابھی تک باریکی بینی سے جائزہ لے رہی ہے اور نئی صورت حال سے نمٹنے کے لئے مختلف آپشنز پر غور و فکر میں مصروف ہے۔ یہ بھی کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں کہ بھارت کے قابل عمل منصوبہ بندی کے بغیر اٹھائے گئے اس اقدام سے اگر آگ بھڑک اٹھتی ہے تو بھارت اس کا الزام پاکستان پر دھر دے گا کیونکہ
مزید پڑھیے


عبد دیگر ، عبدہ ُ چیزے دگر

اتوار 11  اگست 2019ء
ہارون الرشید
ایسے ہوتے ہیں ، اللہ کے بندے ، شکر گزار ، شادماں اور قناعت پسند۔ اقبالؔ نے کہا تھا : عبد دیگر ، عبدہ ُ چیزے دگر ۔ بندہ اور ہے ، اللہ کا بندہ کچھ اور ! شاکر خان کا اللہ بھلا کرے ۔ آج کا دن اس نے جگمگا دیا۔ خیال کی ویران پڑی دنیامیں ایک گلستان آباد کر دیا۔ میر ؔصاحب یاد آئے چلتے ہو تو چمن کو چلیے ، سنتے ہیں بہاراں ہیں پھول کھلے ہیں ، پات ہرے ہیں ، کم کم بادو باراں ہے اور یہ کہ گلشن میں آگ لگ رہی تھی رنگِ گل سے میرؔ بلبل
مزید پڑھیے


بھارت سے تجارتی تعلقات کی معطلی

اتوار 11  اگست 2019ء
اداریہ
بھارت کی طرف سے کشمیر کی آئینی حیثیت بدلنے کے بعد پاکستان نے سفارتی تعلقات کو محدود اور تجارتی عمل کو معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کشمیر پر بھارت کے یکطرفہ اقدام اور پرامن حل کے لئے مسلسل حیل و حجت کی وجہ سے پاکستان اور کشمیری باشندوں کے لئے سنگین مشکلات پیدا ہو چکی ہیں۔ بھارتی اقدام سفارتی اور سیاسی معاہدوں سے انکار کے مترادف ہے جس کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان معمول کے تعلقات کا رہنا بعیداز امکان ہے۔ بھارت نے ماضی میں ہر رابطے کا ذریعہ اپنے مفادات کے لئے استعمال کیا۔ حتیٰ کہ جب
مزید پڑھیے


’’ قائد ِملّت ؒ ‘‘ کا مُکّا اور ’’ بے تیغ سپاہی!‘‘

هفته 10  اگست 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ جب بھی مقبوضہ کشمیر میں حریت پسند کشمیریوں پر بھارت کی مسلح افواج کے ظلم و ستم کی داستان دہرائی جاتی ہے تو پاکستان کے حکمرانوں ، سیاستدانوں خاص طور پر تحریک پاکستان کے کارکنوں کی طرف سے اہل پاکستان کو علاّمہ اقبالؒ، قائداعظم محمد علی جناحؒ اور پاکستان کے پہلے وزیراعظم ’’ قائد ملّت ‘‘ خان لیاقت علی خانؒ ، کے افکار و نظریات سے آگاہ کرنے کا عمل تیز ہو جاتا ہے ۔ اِس بار بھی مودی حکومت کی طرف سے صدارتی فرمان کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق بھارتی آئین کے
مزید پڑھیے


پروفیسر شمیم عارف قریشی کی پہلی برسی

هفته 10  اگست 2019ء
ظہور دھریجہ
بندی دے وچ بول اساڈے بندی دے وچ دید ما دھرتی دی اوپری تھئی اے کیجھی ساڈی عید عید قرباں کی آمد آمد ہے، اس کے ساتھ عید آزادی 14 اگست بھی آ رہی ہے، اس حوالے سے شمیم عارف قریشی کا یہ شعر اپنے اندر معنوعیت کا جہان لئے ہوئے ہے ،شمیم عارف قریشی کا اصل حوالہ علم و دانش کا تھا وہ بہت اچھے خطیب اور اس سے بہت ہی اچھے سامع تھے، ان کا یہ شعر پڑھ کر وہ مجھے اس لئے بھی یاد آ رہے ہیں کہ ان کی تاریخ وفات 11 اگست 2018ء ہے ان
مزید پڑھیے


یوم عرفہ کا روزہ

هفته 10  اگست 2019ء
رعایت اللہ فاروقی
دو چار سال ادھر کی بات ہے، اپنے گھر کی قریبی مارکیٹ میں جانا ہوا۔ اس روز حجاج میدان عرفات میں تھے اور بیشتر چینلز اس کے لائیو مناظر دکھا رہے تھے۔ مارکیٹ میں ایک جانب تین نوجوان موبائل فون کے ساتھ کچھ کرتے نظر آئے۔ میں نے پوچھا، بیٹا ! آج یوم عرفہ ہے نا ؟ تینوں نے کہا "جی انکل" وہاں سے دودھ والے کی دوکان پر گیا، اس سے بھی یہی سوال کیا، میری داڑھی کی طرف دیکھتے ہوئے مسکرا کر بولا "یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ آپ کو پتہ نہ ہو کہ آج یوم عرفہ ہی ہے" وہاں سے نکلا
مزید پڑھیے


کشمیر اور عالمی ضمیر

هفته 10  اگست 2019ء
قدسیہ ممتاز
بھارت کی طرف سے کشمیر کی قانونی حیثیت تبدیل کرنے کے بعد یہ ساری دنیا، جسے عالمی برادری کے پرفریب نام سے یاد کیا جاتا ہے، کی ذمہ داری تھی کہ وہ دنیا میں ایک اور فلسطین نہ بننے دیتی۔ایسا لیکن نہیں ہوا۔ ایسا ہوگا بھی نہیں۔دنیا کو اس بات میں کوئی دلچسپی نہیں کہ بھارت کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کررہا ہے۔مقبوضہ وادی عملاً ایک مفتوحہ علاقہ بن چکی ہے۔ کرفیو اور ابلاغ کے تمام ذرائع بشمول انٹرنیٹ ، بند ہونے کے باعث کسی کو علم نہیں کہ وہاں کیا ہورہا ہے۔ میں نے کوشش
مزید پڑھیے


وقت نے دی ہے تمہیں چارہ گری کی مہلت

هفته 10  اگست 2019ء
ڈاکٹر حسین پراچہ
گزشتہ چار پانچ روز سے تقریباً ڈیڑھ کروڑ کشمیری انتہائی ہولناک کرفیو کی زد میں ہیں۔ وہ گھروں میں محبوس ہونے پر مجبور ہیں جذبہ آزادی کو پابہ زنجیر کرنے کے لئے 9لاکھ بھارتی فوجی کشمیر میں تعینات ہیں۔ ہر گھر کے باہر دو تین فوجی بندوقیں تانے کھڑے ہیں۔ دنیا کی ’’سب سے بڑی جمہوریت‘‘ کس شان سے اپنے شہریوں کا سواگت کر رہی ہے۔ نہ تحریک ‘نہ تقریر ‘نہ تحریر کسی بات کی بھی آزادی نہیں۔ انٹر نیٹ اور ٹیلی فون بھی بے جان پڑے ہیں۔ ہمارا کشمیریوں سے اور کشمیریوں کا ہم سے کوئی رابطہ نہیں۔ اپنی
مزید پڑھیے


پارلیمان کا شعور اجتماعی کہاں ہے؟

هفته 10  اگست 2019ء
آصف محمود
قوموں پر بحران آتے رہتے ہیں ، ان میں وہی رشتہ ہے جو تیر اور مشکیزے میں ہوتا ہے۔ قیادت کے منصب پر فائز لوگ اگر بالغ نظر اور صاحب بصیرت ہوں تو قوم بحران سے سرخرو ہو کر نکل آتی ہے اور ایسا نہ ہو تو المیے اس کے دامن سے لپٹ جاتے ہیں۔ ہماری دہلیز پر بھی اس وقت غیر معمولی بحران دستک دے رہا ہے ۔سوال یہ ہے پارلیمان کا شعور اجتماعی کہاں ہے؟ انسان پیالہ و ساغر نہیں ، ایک زندہ وجود کا نام ہے۔ دکھ آتے ہیں تو وہ پریشان بھی ہوتا ہے اور مضطرب
مزید پڑھیے


نہیں !عالی مرتبت! نہیں!

هفته 10  اگست 2019ء
محمد اظہارالحق
کون سا خربوزہ میٹھاہے؟ کون سا تربوز اندر سے پھیکا ہے؟ اوپر سے سب ایک جیسے ہیں۔ تربوز بیچنے والا ایک کو ٹوہتا ہے‘ پھر دوسرے کو! تیسرے پر ہاتھ مار کر آپ کو دے دیتاہے آپ مطمئن ہو جاتے ہیں۔ شاید اسے یہی گُر بتایا گیا ہے کہ گاہک کی تسلی کے لئے ایک تربوز پر ہاتھ مارو‘ پھر دوسرے پر‘ تیسرا گاہک کو پیش کر دو! خوش ہو کر خرید لے گا! انسان باہر سے ایک جیسے ہیں! وہی سر‘ سر کے اگلے حصے پر پیشانی! پیشانی کے نیچے ناک نقشہ! ہائے افسوس! یہی تو المیہ ہے ! اسی کا تو رونا ہے۔
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں

راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ




سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن


عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم