کراچی،لاہور(کلچرل رپورٹرز) کراچی فلم سوسائٹی کے بینر تلے منعقدہ دوسرے پاکستان انٹرنیشنل فلم فیسٹول کااختتام پاکستان کے پہلے ہینڈ ڈراینیمیشن سٹوڈیو اور ’’مانو اینیمیشن سٹوڈیوز ‘‘ کی فلم ’’دی گلاس ورکر ‘‘کے خصوصی پریویو سے ہوا جسے ناظرین نے بے حد پسند کیا ۔ اس موقع پر مانو اینیمیشن سٹوڈیوز کے بانی عثمان ریاض نے درپیش مسائل اور سفر سے حاظرین کو آگاہ کیا۔ پف کے آخری روز کا آغاز کے ایف ایس کے زیر اہتمام سالانہ تقریب سے ہوا جس میں پرنسپل سیکریٹری گورنمنٹ آف سندھ ایس ٹی مصطفی‘ پرنسپل سیکریٹری سی ایم سندھ ساجد جمال ابڑو ‘یو ایس قونصلیٹ جنرل کے نمائندوں ‘فلم میکرز ‘اداکاروں اور کراچی فلم سوسائٹی کے بانی ممبران نے شرکت کی۔اس موقع پر ڈاکٹر عشرت حسین نے اینیمیشن انڈسٹری کی فروغ پر زور دیا ۔ فیسٹیول کے آخری رو ز ’’جوفیری وکسلر‘‘کے زیر اہتمام ایک ورکشاپ کا بھی انعقاد کیا گیا جس کے بعد عزیز جندانی کی فلم ’’ڈونکی کنگ‘‘ کی سکریننگ بھی کی گئی ۔