اسلام آباد ، لاہور (وقائع نگار خصوصی،آن لائن) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے فرانس کے وزیر خارجہ جان ایو لو دریان،ہسپانوی وزیر خارجہ ارنچا گونزیلز لایا،ترک وزیرِ خارجہ میولوت چاوش اولو اوربنگلہ دیشی وزیرخارجہ کے عبدالمومن سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور عالمی آفت کرونا سے نمٹنے کیلئے تعاون پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔شاہ محمود قریشی نے ٹیلیفونک گفتگو میں فرانس، سپین، ترکی میں کرونا وائرس کے باعث جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ وزرائے خارجہ نے کرونا کے عالمی چیلنج سے نبرد آزما ہونے اور باہمی تعاون کے فروغ کیلئے مشاورت جاری رکھنے کا فیصلہ کیا۔شاہ محمود قریشی نے فرانس میں کرونا سے متاثرہ 13 پاکستانیوں کو بروقت طبی امداد فراہم کرنے پر فرانسیسی ہم منصب کا شکریہ ادا کیا۔ شاہ محمود نے کہا عالمی وبا پھوٹنے سے ترقی پذیر ممالک کو شدید معاشی مشکلات کا سامنا ہے ، برآمدات اور زرمبادلہ بہت حد تک کم ہونے کا اندیشہ ہے ۔ فرانسیسی وزیر خارجہ نے ترقی پذیر ممالک کو درپیش معاشی مسائل کا مسئلہ جی 20 کے ساتھ اٹھانے کا عندیہ دیا۔ وزیر خارجہ نے موجودہ ایمرجنسی صورتحال کے پیش نظر 26 مارچ کو پاک فرانس اجلاس ویڈیو لنک کے ذریعے منعقد کرنے کی تجویز دی۔ شاہ محمود قریشی سے ہسپانوی وزیر خارجہ نے کہا ہم ان ممالک کو معاشی سہولت فراہم کرنے کیلئے معاملہ جی 20 اجلاس میں اٹھائیں گے ۔وزیر خارجہ نے ترک ہم منصب سے ترکی میں پھنسے ہوئے 26پاکستانیوں کی جلد وطن واپسی کا معاملہ اٹھایا۔ترک وزیر خارجہ نے کہا فلائٹس بحال ہونے پرانہیں روانہ کر دیا جائے گا۔علاوہ ازیں پاکستان اوربنگلہ دیش نے سارک کووڈ 19 ایمرجنسی فنڈ‘‘قائم اورمعاشی سہولت کی فراہمی کا معاملہ جی 77 فورم پر اٹھانے کی تجویز پراتفاق کیا ۔ترجمان دفترخارجہ عائشہ فاروقی کے مطابق شاہ محمود قریشی نے منگل کو اپنے بنگلہ دیشی ہم منصب اے کے عبدالمومن سے ٹیلیفونک رابطہ کیا۔دریں اثناء وزیر خارجہ اسلام آباد میں اٹلی کے سفارتخانہ گئے اور اٹلی میں کثیر جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ شاہ محمود قریشی نے کرونا پروزارت خارجہ میں قائم’’کرائسز مینجمنٹ سیل‘‘کا دورہ کیا ۔وزیر خارجہ نے پاکستانی سفارتخانوں کو دنیا بھر میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے ساتھ روابط کو فروغ دینے کی ہدایت کی ۔ قبل ازیں سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا۔پرویز الہٰی نے کہا کہ کرونا کے پیش نظر امریکہ میں بھی قیدیوں کی رہائی ہورہی ہے ، قوم کی بیٹی عافیہ صدیقی کی رہائی کیلئے بھی کوششیں تیز کی جائیں۔اس کیلئے دفترخارجہ امریکی محکمہ خارجہ سے رابطہ کرے ۔شاہ محمود قریشی نے امریکی حکام سے بات کرنے کی یقین دہانی کرائی۔