بڑی عمر کے افرادمیں کورونا کیسز کی تعداد تیزی سے بڑھنے لگی ہے، وہاں ایک سے 10 سال کے بچوں میں بھی کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد ایک سو سے بڑھ گئی ہے۔ بچوں میں کورونا کا پھیلائو انتہائی تشویشناک ہے۔ کورونا وائرس ابھی تک تو صرف بڑی عمر کے افراد پر اثر انداز ہوتا تھا لیکن اب بچوں پر بھی حملہ آور ہو چکا ہے ،جو باعث تشویش ہے۔ بڑی عمر کے افراد تو پھر بھی مشکل وقت میں اکیلے رہ سکتے ہیں لیکن بچوں کی نگہداشت کے لیے ماں باپ کو لازمی طور پر ساتھ رہنا ہوگا، جس سے والدین کے متاثر ہونے کابھی خطرہ لاحق ہوگا۔ اس لیے والدین قبل از وقت بچوں کی جدید خطوط پر تربیت کریں‘ انہیں ماسک کے بغیر گھروں سے باہر نہ جانے دیں۔ گھر سے باہر ان کے کھیل کود پر مکمل پابندی عائد کریں۔ باامرمجبوری گھر سے باہر جانا بھی ہے تو واپسی پر ان کے ہاتھوں کو بیس سیکنڈ تک صابن سے دھوئیں تاکہ کورونا پھیلنے کے امکانات معدوم ہو جائیں۔ خدانخواستہ اگر والدین بچوں پر نظر نہیں رکھیں گے یا پھر لاڈ پیار میںان پر پابندی عائد نہیں کریں گے تو مشکل میں پڑ سکتے ہیں۔ اس لیے ضرورت اس امر کی ہے کہ والدین بچوں پر بھرپور توجہ دیں اور سختی سے انہیں گھروں تک محدود رکھیں تاکہ کسی نئی مشکل سے بچ سکیں۔