لاہور؍اسلام آباد؍ نیویارک(رپورٹنگ ٹیم؍ نیوز ایجنسیاں)کورونا سے مزید49 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 1052ہوگئی، مریضوں کی تعداد 49497 تک پہنچ گئی ہے ۔گزشتہ 24 گھنٹوں میں ریکارڈ 15 ہزار 346 کورونا ٹیسٹ کئے گئے ہیں۔اب تک پنجاب میں 17382، سندھ میں 19924، خیبرپختونخوا میں 7155، بلوچستان میں 3074، اسلام آباد میں 1235 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے ۔ڈی ایچ کیو ہسپتال شیخوپورہ میں ایک اور خاتون بشریٰ بی بی مبینہ طور پر کورونا کا شکار ہونے کے باعث انتقال کرگئی جسے حکومتی ایس او پیز کے تحت سپرد خاک کردیا گیا۔لاہور جنرل ہسپتال میں آرتھوپیڈک وارڈ کے 16 ڈاکٹرز کورونا سے متاثر ہوگئے جس کے بعد ایم ایس جنرل ہسپتال نے ابتدائی طور پرآرتھوپیڈک وارڈ کو 3 روز کے لئے بند کردیا۔ ایوب میڈیکل کمپلیکس ایبٹ آباد میں نیوروسرجری کے ڈاکٹر سعید میں بھی کورونا کی تصدیق ہو گئی۔ٹھل سے منتخب رکن سندھ اسمبلی ڈاکٹر سہراب خان سرکی اور ان کے خاندان کے 6 افراد بھی کورونا کا شکار ہوگئے ۔چونیاں میں بھی ایک شخص کورونا کا شکار ہوگیا۔علاوہ ازیں دنیا بھر میں مریضوں کی تعداد ساڑھے 51لاکھ تک پہنچ گئی جبکہ ہلاکتیں 3لاکھ 33 ہزار ہوگئی ہیں۔گزشتہ روز امریکہ اور برازیل میں بڑے پیمانے پر اموات ہوئیں۔جنوبی افریقہ میں دو دن کا بچہ کورونا سے چل بسا۔بھارت میں ایک روز کے دوران ساڑھے 6 ہزار کورونا مریض سامنے آئے ہیں۔ لبنان میں آج سے جمعہ کی نماز مساجد میں ادا کرنے کا اعلان کیا گیا ہے تاہم فرض نمازیں گھروں میں ہی ادا کرنا ہوں گی۔ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ عید کے بعد تمام مذہبی اور مقدس مقامات کھول دیئے جائیں گے ۔امریکہ میں لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد معیشت میں بہتری کے امکانات کے باوجود گزشتہ ہفتے مزید 24 لاکھ افراد نے بیروزگاری الاؤنس کی درخواست دیدی۔ترجمان وائٹ ہائوس نے کہا ہے کہ یورپی شہریوں پر عائد سفری پابندیاں برقرار رہیں گی۔امریکہ کے ڈیموکریٹس اراکین کانگریس نے کہا ہے کہ ملک میں کورونا سے ہلاکتیں ایک لاکھ کے قریب پہنچ گئی ہیں اور صدر ٹرمپ کو مرنیوالوں کی یاد میں قومی پرچم سرنگوں کرنے کا حکم دینا چاہئے ۔عالمی ادارہ صحت کے کورونا پر خصوصی نمائندے ڈیوڈ نابارو نے کہا کہ وبا کے دوران سب سے زیادہ ترقی پذیر ممالک کا غریب اور مزدور طبقہ متاثر ہوا ہے اور امیر ممالک کو ان پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔