لاہور(رپورٹ: قاضی ندیم اقبال)کرتار پور کوریڈور کے سلسلے میں متروکہ وقف املاک بورڈ حکام نے 99سال قدیم گوردوارہ صاحب کرتار پور کی اصل عمارت کی تزئین و آرائش کا کام مکمل کر لیا۔23کنال2مرلہ پر محیط گوردوارہ ، تین مقدس کنوؤں اور اس سے ملحقہ دیگر عمارتوں میں کسی قسم کی تبدیلی نہیں کی گئی۔گورو نانک دیو جی کے 550ویں جنم دن کی تقریبات میں شرکت کے لئے آنے والے سکھ یاتری گودرواہ صاحب کو اصل حالت میں اپنی آنکھوں سے دیکھیں گے ۔رپورٹ وفاقی حکومت کو پیش کر دی گئی۔ذرائع کے مطابق وفاقی وزیر مذہبی امور ، حج، و بین المذاہب ہم آہنگی اور دیگر متعلقہ اداروں کو ایک رپورٹ اپنے حالیہ دورہ اسلام آباد کے دوران پیش کی ہے ۔ جس میں بتایا گیا ہے کہ یہ گوردوارہ پاکستان اور بھارت کی سرحد سے تقریبا4سے 5کلومیٹر کے فاصلے پرواقع ہے ۔گوردوارہ صاحب کرتار پور کا کورڈ ایریا 12مرلہ153مربع فٹ ہے ۔گوردوارہ کے ساتھ لنگر ہال ، پری فیبریکیٹیڈ20کمرے اور 13باتھ رومز ہیں۔20مردوں اور 20خواتین کے استعمال کے لئے ٹائلر بلاک الگ سے قائم ہے ۔یہاں گرنتھی صاحب کی رہائشگاہ ،5 چیکنگ پوسٹیں بھی موجود ہیں۔ ذرائع کے مطابق رپورٹ پر وفاقی حکومت نے اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔