ریاض( آن لائن،این این آئی )سعودی عرب نے قونصل خانے میں صحافی جمال خشوگی کے قتل کی تصدیق کردی،دوسری طرف خشوگی کے بیٹوں نے والد کے قاتلوں کو معاف کر دیا ہے ۔سعودی عرب نے پہلے اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ سعودی صحافی جمال خشوگی استنبول میں واقع قونصل خانے میں لڑائی کے دوران ہلاک ہوئے بعدازاں ان کی لاش کے ٹکڑے ترکی میں تعینات سعودی سفیر کے گھر کے باغیچے سے برآمد ہوئے ۔سعودی عرب میں مقیم جمال خشوگی کے بیٹوں صالح اور عبداﷲ نے ایک بیان میں کہا کہ رمضان کی مقدس شب انہوں نے اپنے والد کے قاتلوں کو معاف کر دیا ہے ۔خشوگی کے بیٹوں صالح اور عبداﷲ نے کہا کہ اس مقدس شب ان کے ذہنوں میں اﷲ کی آیت ہے کہ، اگرکوئی شخص معاف کردے اور مفاہمت کرلے تو اس کا اجراﷲ دے گا۔ واضح رہے کہ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے صحافی جمال خشوگی کو استنبول میں واقع سعودی قونصلیٹ میں 2 برس قبل قتل کیا گیا تھا۔ترک میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ جمال خشوگی کو قونصلیٹ ہی میں تشدد کرکے قتل کیاگیا ۔ ، مگر ان کی باقیات آج تک نہیں مل سکی ہیں۔سعودی عرب نے قتل کے جرم میں دسمبر 2019ء میں 5افراد کو سزائے موت اور تین کو قید کی سزا سنائی تھی۔