BN

اثر چوہان



’’ریاست ِمدینہؔ جدِید، میں شہباز شریف ؔکا اعزاز؟


معزز قارئین!۔ بعد از خرابی بسیار‘‘۔ وزیراعظم عمران خان اور اُن کی ہائی کمانؔ کے ارکان پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف میاں شہباز شریف کو "Chairman Public Accounts Committi" نامزد / منتخب کرانے پر راضی ہوگئے ہیں ۔ اِس پر بھلا "Public" (عوام/ جمہور) کیا کرسکتے ہیں؟۔ جب قومی اسمبلی میں حزبِ اختلاف کی اکثر سیاسی/ مذہبی جماعتوں کے ارکان ماضی کی تمام تلخیاں بھلا کر (کرپشن کے کئی مقدمات میں ملوث ) شہباز شریف صاحب کو "P.A.C" کا چیئرمین بنانے کے لئے بضد تھیں تو ’’ نیا پاکستان‘‘ اور ’’
هفته 15 دسمبر 2018ء

آغا شورش ؔکاشمیری /سیّد محمد جعفریؔ اور شاعرِ سیاستؔ!

جمعه 14 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ نہ جانے ’’ نیا پاکستان‘‘ کا دَور شروع ہونے کے باوجود مَیں قنوطیت پسند (Pessimist) کیوں ہوگیا ہُوں۔ پاکستان قائم ہُوا تو، میری عُمر 11 سال تھی اور مَیں نے کسی بھی دَورمیں حکمرانوں سے عوام کومطمئن نہیں دیکھا۔ پرانے دَور میں بھی ، مسلمان ملکوں کے عوام حکمرانوں سے مطمئن نہیں ہوتے تھے ۔ فارسی اور بعد ازاں اردو شاعروں نے اپنے اشعار سے اپنے اپنے حکمرانوں سے گِلے شکوے اور عوام سے ہمدردی کا اظہار کِیا یا پھر دُنیا اور آخرت سنوارنے کے لئے ’’ نیک اعمال‘‘ کی ترغیب دِی۔ آج کے کالم کو مَیں
مزید پڑھیے


’’شیخ رشید ، آوے اِی آوے !‘‘

جمعرات 13 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ 10 دسمبر کو ملک بھر میںہفتہ وار تعطیل تھی لیکن، وزیراعظم عمران خان کی صدارت میں وفاقی کابینہ کا خصوصی اجلاس منعقد ہُوا اور وہ بھی پورے نو (9) گھنٹے تک۔ اجلاس کیا تھا؟ سارے وزراء کا امتحان تھا۔ چونکہ اقتدار میں آنے کے بعد وزراء کا پہلا امتحان تھا اِس لئے وزیراعظم صاحب نے سب کو "Pass" کردِیا۔ ہمارے یہاں رواج ہے کہ جب کوئی فلم سینما گھروں کے لئے "Release" ہوتی ہے تو اخبارات میں اُن کے اشتہار کے اوپر لکھا ہوتا ہے کہ "Censor Board" نے بخوشی پاس کردِیا۔وزراء کا امتحان تحریری (Written) نہیں تھا
مزید پڑھیے


ریاست ِ مدینہؔ اور دیوانؔ پاکپتن درگاہ، مودُودؔ چشتی؟

منگل 11 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
وزیراعظم جناب عمران خان کو داد دینا پڑے گی کہ وہ قائداعظمؒ کی قائم کی گئی ’’ ریاستِ پاکستان‘‘ کو ’’ ریاستِ مدینہ‘‘ بنانے میں کافی سنجیدگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں ؟۔ 7 دسمبر کے روزنامہ ’’92 نیوز‘‘ کے صفحہ اوّل پر شائع ہونے والی قاضی ندیم اقبال کی خبر کے مطابق ’’ جنابِ وزیراعظم ریاستؔ پاکستان کو ریاستؔ مدینہ کی طرز پر چلانے کے عزم کو تکمیل تک پہنچانے کے لئے ’’ قومی عُلماء و مشائخ کونسل‘‘ قائم کرنا چاہتے ہیں چنانچہ حکومتِ پنجاب نے ’’ قومی عُلماء و مشائخ کونسل‘‘ کے لئے پنجاب سے دو عُلماء
مزید پڑھیے


کُھلّی ڈُلھّی ، زبانِ صدر ، کُھلّا ڈُلھا ایوانِ صدر؟

پیر 10 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ ماہ ربیع الاوّل کے آخری دو دِن جمعتہ اُلمبارک اور ہفتہ کو صدرِ مملکت جناب عارف اُلرحمن علوی نے دو ایسے کام کئے ہیں جو اِس سے پہلے پاکستان کے کسی بھی صدرِ مملکت نے نہیں کئے ۔ بقول شاعر … یہ رُتبہ ٔ بلند ملا ، جس کو مل گیا! 7 دسمبر جمعتہ اُلمبارک کو جنابِ صدر نے اسلام آباد میں منعقدہ "National Voters Day" کی تقریب میں (جس میں چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا بھی موجود تھے) اعتراف ( Confesson) کیا ہے کہ ’’ مَیں نے 1970ء کی دہائی (یعنی 1970ء سے 1979ء تک
مزید پڑھیے




"Shieldmarshal P.M.Imran Khan?"

هفته 08 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ وزارتِ عظمیٰ کی منزل تک پہنچنے سے پہلے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان کی حیثیت سے جناب عمران احمد خان نیازی نے اپنی کارکردگی کی بنا پر کئی اعزازات حاصل کئے۔ جن میں "Shields" بھی تھیں ، اُن میں 1992ء کے کرکٹ ورلڈ کپ کا حصول (اور Shield) بھی شامل تھی ۔ مختلف شعبوں میں جب بھی کوئی شخص نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرتا ہے تو اُسے کوئی نہ کوئی "Shield" ضرور دِی جاتی ہے ۔ یوں تو تاریخ میں ’’ سِپر (ڈھال ) کو ’’ شیلڈ‘‘ کہا جاتا تھا لیکن پھر بطور انعام دِی جانے والی
مزید پڑھیے


گورنر ہائوس ؔاور ایچی سن کاؔلج لاہور کی دیواریںؔ؟

جمعرات 06 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ 3 دسمبر کو لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مامون اُلرشید صاحب نے لاہور کے ایک شہری خواجہ محسن عباس اور دیگر کی درخواستوں پر سماعت کے دَوران ، سرکاری وکیل سے پوچھا کہ ’’ کیا گورنر ہائوس لاہور کی دیواریں گرا دِی گئی ہیں؟‘‘ تو، وکیل نے جواب دِیا کہ ’’ جی ہاں!۔ دیواریں گرانے کا کا م شروع ہو چکا ہے ۔ دراصل گورنر ہائوس ایک صدی سے بھی پرانا ہے‘‘ فاضل جج نے پوچھا کہ ’’ گورنر ہائوس کِس کے کنٹرول میں آتا ہے؟ ‘‘ ۔ عدالت کو آگاہ کِیا گیا کہ ’’ پنجاب حکومت
مزید پڑھیے


اکیلے وزیراعظم ،کئی اینکر پرسنز ، رُو برُو؟

بدھ 05 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ وزیراعظم جناب عمران خان کو داد دینا ہی پڑے گی ۔ 3 دسمبر کی شب وہ اکیلے تھے جب وہ، مختلف نیوز چینلز کے کئی تجربہ کار ( بلکہ جہاں دِیدہ ) "Anchorpersons" (نشری پروگراموں کے رابطہ کاروں) کے رو برُو (مدِ مقابل ، آمنے سامنے ) محو گفتگو تھے ۔ جنابِ وزیراعظم کی گفتگو بہت طویل تھی ۔ ظاہر ہے کہ موصوف اپنی حکومت کے سو ؔدِن کی کارکردگی کو ڈیڑھ گھنٹے میں تو بیان نہیں کرسکتے تھے؟ لیکن، اُنہوں نے تو کُوزے میں دریا کو بند ہی کردِیا۔ حضرت مرزا داغ ؔدہلوی سیاستدان نہیں تھے
مزید پڑھیے


صدر عارف علوی بھی کپتان ؔچپل کے دیوانے؟

پیر 03 دسمبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ یکم دسمبر کو صدرِ مملکت جناب عارف اُلرحمن علوی کا دورۂ پشاور کامیاب رہا ۔ خبروں کے مطابق’’ اُنہوں نے قومی امور پرپریس کانفرنس سے خطاب کِیا ۔ عوامی نیشنل پارٹی کے راہنما ہارون بلور اور امیر جمعیت عُلماء اسلام ( سمیع اُلحق گروپ) کی وفات پر اُن کے خاندان سے تعزیت کی اور "Box Item" یہ کہ ’’ صدرِ مملکت بھی کپتان ؔ چپل کے دیوانے نکلے‘‘ عام طور پر چپلؔ ایک خاص قِسم کی پشاوری جوتی۔ ( کھیڑی) کو پشاوریؔ چپل کہا جاتا ہے (خواہ وہ پاکستان کے کسی بھی علاقے میں تیار ہوتی یا پہنی
مزید پڑھیے


سِکھوں ؔکے لئے تو، نیا پاکستاؔن بن گیا؟

جمعه 30 نومبر 2018ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ 1960ء میں ایک پنجابی فلم میں گلوکار اور ہیرو مرحوم عنایت حسین بھٹی نے ایک گیت گایا تھا جس کا مکھڑا (مطلع) تھا۔ دِل دَین نُوں کسے نُوں نذرانہ، تے پِھراں مَیں بہانہ لبھّدا! کرکٹر اور بھارتی پنجاب کے وزیر بلدیات ، سیاحت و ثقافت نوجیت سنگھ سِدّھُو کے توسط سے ہمارے وزیراعظم عمران خان نیازی کو بھارت کو دِل دینے کا بہانہ مِل گیا۔ اُنہوں نے (پاکستان کے ازلی دشمن ) بھارت کے ساتھ "Franco- German Union" کی طرز پر "Pak-India Union" بنانے کی خواہش کا اظہار کِیا ہے؟۔وزیراعظم عمران خان سے دوستی اور پاک فوج کے سربراہ
مزید پڑھیے