BN

ارشاد محمود



کشمیر ایک بار پھر دوراہے پر


بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اور 35 اے میں ترمیم اور مقبوضہ جموں و کشمیر کو دوحصوں میں تقسیم کرکے مرکزی حکومت کے تابع کرنے کے اقدام نے صرف کشمیریوں کو زبردست اشتعال میں ہی مبتلانہیں کیا بلکہ بھارت اور پاکستان کے مابین کشیدگی میں بھی غیر معمولی اضافہ کردیا ہے۔ کشمیر کے عوام گزشتہ چھ دنوں سات دنوں سے مکمل لاک ڈاؤن اور محاصرے میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔ بیرونی دنیا تک انہیں ر سائی نہیں حتی کہ مقامی اخبارات تک نہیں چھپ پارہے۔پانچ سو سے زائد سیاسی کارکن حراست میں ہیں۔ کوئی نہیں جانتا کہ کرفیو
بدھ 14  اگست 2019ء

کشمیر پر نیا گیم پلان

پیر 05  اگست 2019ء
ارشاد محمود
کشمیر سے آنے والی اطلاعات نے پاکستان میں اضطراب ہی نہیں بھونچال کی سی کیفیت پیدا کردی ہے۔بھارتی کانگریس ہی نہیں کشمیر کے آخری مہاراجہ ہری سنگھ کے صاحبزادے کرن سنگھ نے بھی بھارت کی مرکزی حکومت کو مشورہ دیا کہ وہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے چھیرچھاڑ نہ کرے۔بھارت نواز کشمیری جماعتوں میں بھی سراسیمگی پائی جاتی ہے۔عمرعبداللہ کہتے ہیں کہ انہیں اعلیٰ سطحی ملاقاتوں کے باوجود کچھ بتایانہیں جارہا۔ ہنگامی بنیادوں پر کشمیر سے دولاکھ کے لگ بھگ سیاحوں اور بھارتی طلبہ وطالبات کو دہلی روانہ کیاگیا۔ ایئرسروس اور ریلوے نے سیاحوں کے انخلاء میں بھرپور مدد کی۔
مزید پڑھیے


کشمیر پر ثالثی : ابھی عشق کے امتحان اور بھی ہیں

پیر 29 جولائی 2019ء
ارشاد محمود
اگرچہ پاکستان میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی کشمیر پر ثالثی کی پیشکش پر زبردست جوش وخروش پایاجاتاہے لیکن کشمیر کے اندر حالات دن بدن خراب ہو رہے ہیں۔ حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی نہ صرف ثالثی کی پیشکش کو مسترد کرچکی بلکہ مزید چالیس ہزار فوج سری نگر روانہ کرنے کا عمل شروع کردیاگیا ہے۔خدشہ ہے کہ اگلے چند دنوں یا ہفتوں میں بھارتی آئین کا آرٹیکل 35-Aکی منسوخی کا اعلان ہوجائے گا۔یہ بہت ہی غیر معمولی فیصلہ ہوگا جو کشمیریوں کو کسی بھی قیمت پر قبول نہیں۔ اس دستوری شق کی منسوخی سے ریاست جموں وکشمیر میں بھارتی شہریوں کو
مزید پڑھیے


عمران خان ٹرمپ ملاقات: پاکستان کیا چاہتاہے؟

پیر 22 جولائی 2019ء
ارشاد محمود
وزیراعظم عمران خان کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ہونے والی ملاقات کی کہانی تو اگلے چند دنوں میں آشکار ہوگی لیکن باخبر ذرائع کا خیال ہے کہ دونوں ممالک تعلقات کا ایک نیا باب رقم پرآمادہ ہوچکے ہیں جس کی اساس باہمی تعاون اور شراکت داری بتائی جاتی ہے۔ افغانستان جوباہمی تعلقات میں بگاڑ کا سب سے بڑا محرک تھا اب تعلقات کی بحالی اور ان میں گہرائی پیدا کرنے کا محرک بن رہاہے۔ سوال یہ ہے کہ پاکستان اس تعاون کے عوض کیا حاصل کرنا چاہتاہے؟ افغانستان میں ایک دوست یا خوشگوار تعلقات والی حکومت ۔افغان سرزمین
مزید پڑھیے


گھر ہے ‘ یتیم خانہ نہیں

پیر 15 جولائی 2019ء
ارشاد محمود
شہزاد لطیف سے نوجوانوں کی ایک تربیتی ورکشاپ میں ملاقات ہوئی۔ کیری ڈبے سے وہ اترا اور دن بھر ورکشاپ میں جاری سرگرمیوں میں مصروف رہا۔ ہنستا اور کھیلتا ہمجولیوں کے ساتھ لیکن دوسروںسے الگ تھلک دکھتا۔ اچانک سنجیدہ ہوجاتا۔ گہری سوچ میں ڈوب جاتا ۔سیکھنے اور سمجھنے کی جستجو میں دوسروںپر اکثر سبقت لے جاتا۔ انتظامی کاموں میں ہمارا ہاتھ بٹاتا۔ سرے شام نوجوان گھروں کو لوٹنے لگے تو ڈرائیور اسے لینے آیا۔سوٹڈ بوٹڈ شہزاد لطیف سے تبادلہ خیال کرنے اور اس کی کہانی جاننے کی خواہش نے دفعتاًدل میں انگڑائی لی۔ اس نے بتایا کہ وہ
مزید پڑھیے




بازی اب پلٹ رہی ہے

پیر 08 جولائی 2019ء
ارشاد محمود
مریم نوازشریف کی ویڈیو لیک نے بازار سیاست میں ایک بارپھر ہلچل مچادی ۔شفاف اور غیر جانبدارنہ تحقیقات سے دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ایک دن ضرور ہوگا ۔لیکن فی الحال مریم نواز عدالتی نظام کی شفافیت اور نوازشریف کے مقدمہ کو ایک بار پھر ملک گیر سطح پر زیر بحث لانے میں کامیاب ہوگئی ہیں۔نوازشریف کا مقدمہ سیاسی ہے یا قانونی۔ یہ وہ بیانیہ ہے جس پررائے عامہ تحریک انصاف اور نون لیگ کی قسمت کا فیصلہ لکھے گی۔ مریم نوازبالآخر نون لیگ کی ڈرائیونگ سیٹ سنبھال چکی ہیں۔ اعتدال پسند اور صلح جو شہباز شریف
مزید پڑھیے


افغانوں سے نفرت نہیں محبت

پیر 01 جولائی 2019ء
ارشاد محمود
پاک افغان کرکٹ میچ نے سوشل میڈیا پر دونوں ممالک کے سخت گیر عناصر کو ایک دوسرے کے خلاف صف آرا کردیا۔ چند ایک شر پسند یا ممکن ہے سپانسرڈ افغان شہریوں نے پاکستانی کھلاڑیوں اور شائقین کرکٹ کے ساتھ بدسلوکی کی ہو۔لیکن ملک کے طول وعرض میں ’’نمک حرام‘‘ کے طعنوں کا طوفان اٹھادینا کہاں کی دانشمندی اور انصاف ہے؟افغان ذرا سی اپنی مرضی کیا کرتے ہیں کہ پاکستانیوں کے تن وبدن میں آگ لگ جاتی ہے۔ اکثر کہتے ہیں ہماری بلی ہمیں ہی میاؤں۔ یہ طرزعمل دیکھ اور سن کر برسوں پرانے واقعات حافظے کی سکرین پر بجلی
مزید پڑھیے


طارق مسعود بھی رخصت ہوگئے

پیر 17 جون 2019ء
ارشاد محمود
آزادکشمیر کے سینئر ترین سرکاری افسر جناب طارق مسعود گزشتہ دنوں اچانک اسلام آباد میں رحلت کر گئے۔ ان کا تعلق اس نسل سے تھا جس نے تقسیم ہند اور جموں وکشمیر کے سینے پر تقسیم کی لکیر ابھرنے کے مناظر اپنی آنکھوں سے دیکھے۔ مہاجرت کے دکھ اٹھائے۔ محنت ریاضت اور جستجو سے کامیابیوں اور کامرانیوں کے اعلیٰ مدارج حاصل کیے۔ ان کے ساتھ کام اور سفر کرنے کا موقع ملا تو بہت کچھ سیکھا اور سمجھا۔ خاص طور پر ہمارا جموں کا سفر بہت تاریخی اور یادگار تھا۔ اس سفر میں پہلی بار یہ دیکھنے اور محسوس
مزید پڑھیے


چین کے متعلق خطرناک اطلاعات

پیر 03 جون 2019ء
ارشاد محمود
مغربی ممالک اور خاص کر امریکہ میں چین کے مشرقی ترکستان میں آباد مسلمانوں کے ساتھ روا رکھے گئے سلوک پر نہ صرف ذرائع ابلاغ تشویشناک خبروں اور تبصروں سے اٹے پڑے ہیں بلکہ پارلیمان میں بھی یہ مسئلہ زیر بحث ہے۔ حتیٰ کہ اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے بھی بیجنگ سے اپیل کی کہ وہ مسلمانوں کو عید کا تہوار آزادی سے منانے کی اجازت دے۔ دنیا کی کئی ایک نامور مسلمان شخصیات اور تحریکیں بھی یوغر مسلمانوں کے تحفظ کے لیے سرگرم ہوچکی ہیں۔ امریکہ میں مقیم ایک دوست نے بتایا کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران 2100 مساجد میں نماز
مزید پڑھیے


اب مودی سرکار سے کیسے نمٹیں؟

پیر 27 مئی 2019ء
ارشاد محمود
ٹھیک تین دن بعد نریندر مودی بھارت کے راج سنگھاسن پر فائز ہوں گے۔انہوں نے الیکشن میں کانگریس کو عبرت ناک شکست سے دوچار کیااور نہرو خاندان کو اقتدار کی غلام گردشوں سے اٹھا کر باہر پھینک دیا۔کانگریس اور اس کے حامی زخم چاٹ رہے ہیں۔عمران خان کہتے تھے کہ الیکشن میں وہ سونامی لے کرآئیں گے ۔ حقیقی سونامی مودی نے بھارت میں لاکر دکھایا۔ سیکولر بھارت کے علمبردار وں کے لیے مودی کا دوبارہ برسراقتدار آجانا ایک بھیانک خواب سے کم نہیں۔مودی اور ان کی ٹیم نے کبھی بھی یہ ارادہ چھپایا نہیں کہ وہ بھارت کی
مزید پڑھیے