BN

اشرف شریف


خریدی ہوئی جمہوریت


جمہوریت استحکام کا نام ہے‘ چیزیں مدارسے باہر تیرنے لگیں تو نظام مستحکم نہیں رہتا۔جمہوریت زمین سے پھوٹتی ہے ،یہ پودا نرسری سے مل ضرور جاتا ہے لیکن سازگار ماحول نہ ملے تو خریدار کے پیسے ضائع ہو جاتے ہیں ۔ہاں جہاں خلوص آبیاری کرے وہاں خوب نشوو نما ہوتی ہے۔ حالیہ سینٹ الیکشن نے ملک کو سیاسی بحران کے کنارے پہنچا دیا ہے۔مطلب یہ کہ ہم جمہوری رویے چھوڑ چکے۔ ہم ،کو پھیلا لیں‘ پیپلز پارٹی‘ مسلم لیگ‘ عدلیہ‘ ادارے اور کچھ پی ٹی آئی بھی ہم ہے۔جب عدم استحکام نمودار ہوتا ہے تو نئے مواقع پیدا ہوتے ہیں‘
هفته 06 مارچ 2021ء

داخلی ٹکراو کا شکار ڈھانچہ

بدھ 03 مارچ 2021ء
اشرف شریف
فیصلے آتے ہیں اور دھند بڑھ جاتی ہے،نوٹس لئے جاتے ہیں اور خرابی دوچند ہو جاتی ہے ۔اس ماحول میں اصلاح کس کی کریں ،اپنی یا اداروں کی ؟کسی ادارے میں چلے جائیں‘ ادارے کا مطلب تو آپ سمجھتے ہوں گے نا،ادارہ کوئی بھی ہو وہاں ایک داخلی تصادم اور کشمکش دکھائی دے گی۔ فیصلہ کرنے والے ایک دن جو طے کرتے ہیں اگلے دن اس سے منحرف ہو جاتے ہیں۔ اصول اور ضابطے اس قدر غیر مستحکم کہ گویا پانی پر لکھی تحریر ہیں جو ہلکے سے ارتعاشمیں ڈوب جائے۔ بات سیاست سے شروع اور سیاست پر ختم ہوتی
مزید پڑھیے


کشمیر کا دورہ اور ایک لائق تحسین فلاحی منصوبہ

پیر 01 مارچ 2021ء
اشرف شریف
کشمیر میں ابھی گلاب نہیں کھلے۔ سیب اور ناشپاتی کے درختوں پر بھلے کوئی پتہ نہ ہو سفید اور گلابی پھول بھرے ہیں‘ چیل اور دیار کے درخت ابھی ہرے کچور نہیں ہوئے‘ ابھی دریائے نیلم کا پانی نیلا نہیں ہوا۔ ابھی ضدی برف پہاڑوں کی چوٹیوں پر بیٹھی دھوپ سینکتی ہے۔ ابھی ہوا میں سیت ہے اور ابھی راستے کچھ خطرناک ہیں۔ پاکستان فیڈریشن آف کالمسٹس کے گروپ کو ایک فلاحی ادارے سائٹ فائونڈیشن نے مدعو کیا۔ ہم سب ملک سلمان کے ہمرکاب طویل سفر کر کے ضلع نیلم کی حدود میں داخل ہوئے تو بارش نے آ لیا۔
مزید پڑھیے


آسودہ خاک کتابیں

هفته 27 فروری 2021ء
اشرف شریف
بچپن میں سب سے پسندیدہ کام ردی اخبارات پڑھنا ہوتا۔کوئی چیز پڑیا میں آتی تو کاغذ کا وہ ٹکڑا میرے ہاتھ لازم لگتا۔ سودا سلف کاغذ کے بنے لفافوں میں آتا۔ان پر کئی اہم معلومات ہوتیں۔ ردی لینے والا گلی میں آتا۔میری نظر اس کی بوریوں میں بھرے کاغذ اور کٹی پھٹی کتابوں پر ہوتی۔ ایک بار ردی والی دکان کے پاس سے گزرا تو بیس کے قریب بڑی تختی کی کتابیں گتے کی جلدوں میں پڑی تھیں۔ میں نے ان کی ورق گردانی کی تو عربی اور فارسی کی شاندار کتابیں تھیں‘کچھ کے اوراق پر خون کے دھبے تھے۔
مزید پڑھیے


جمہوریت چلانی ہے یا تگڑے خاندان؟

بدھ 24 فروری 2021ء
اشرف شریف
سرحدوں پر امن ہے مگر ملک کے اندر بہت سی فوجیں ایک دوسرے کے سامنے تن کر کھڑی ہوگئی ہیں۔ وزیراعظم کو فوج اپنا کمانڈر ان چیف اور ملک کا چیف ایگزیکٹو مانتی ہے۔ صدر کے دفتر سے کوئی شرارت نہیں ہورہی۔ بعض عدالتی شخصیات سے کچھ مسئلہ ہے مگر چیف جسٹس آئین و قانون کے مطابق کام چلا رہے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ حکومت کے خلاف کوئی غیرقانونی و غیر آئینی کھچڑی نہیں پک رہی۔ دوسری طرف اپوزیشن ہے۔ پہلے سب کچھ مولانا فضل الرحمن دکھائی دیتے تھے اب ڈرائیونگ سیٹ پر آصف علی زرداری آ گئے ہیں۔
مزید پڑھیے



جنگلی حیات کے علاقے پر انسانوں کا قبضہ

پیر 22 فروری 2021ء
اشرف شریف
زمین وسعتوں کی جگہ ہے،اتنی وسعتیں کہ ابھی کئی علاقے انسانی قدموں تلے نہیں آئے لیکن حجم ہی سب کچھ نہیں‘ اس وسعتوں کی حامل زمین کا سب سے قیمتی جوہر ماحول ہے جو بگڑتا جا رہا ہے۔ کرہ ارض پر موجود جنگلی حیات کے ٹھکانے ختم ہو رہے ہیں‘85فیصد جانداروں کی نسلیں معدومی کے خطرے سے دوچار ہیں۔ ماحول کا بگاڑ جنگلات کی کٹائی اور انسانی آبادی میں تیزی سے ہونے والے اضافے کے سبب بڑھ رہا ہے۔ جانداروں کی ہر نسل کو ایک ایسے مخصوص ماحول کی ضرورت ہوتی ہے جو اسے پناہ اور خوراک کے ساتھ ساتھ
مزید پڑھیے


سینٹ الیکشن: کیا ووٹنگ ضروری ہے؟

هفته 20 فروری 2021ء
اشرف شریف
سینٹ انتخابات جس طریقے سے ہوا کرتے تھے وہ طریقہ متنازع ثابت ہو رہا ہے۔ الیکشن کمشن کو پہلی بار اس سوال کا جواب عدالت میں دینا پڑ رہا ہے کہ اس نے سینٹ انتخابات میں ووٹوں کی خریدوفروخت روکنے کے لئے کیا اقدامات کئے ہیں۔ سب سے اہم معاملہ بالواسطہ طریقے سے متناسب نمائندگی کا ہے۔ سپریم کورٹ کے معزز جج حضرات نے اس مسئلے کو بالکل جڑ سے پکڑ کر سوال اٹھایا ہے کہ جب ساری جماعتوں کو اسمبلیوں میں حاصل نمائندگی کے تناسب سے سینٹ میں نشستیں ملنا آئینی تقاضا ہے تو پھر کیوں ضروری ہے
مزید پڑھیے


سب ہار جائیں گے؟

بدھ 17 فروری 2021ء
اشرف شریف
آئسمبرڈ برونل 1806ء میں پیدا ہوا۔ وہ 53 برس تک جیا۔ ان برسوں میں اس نے ٹرانسپورٹ کے شعبے کو انقلابی جدت دی‘ انجینئرنگ کی شکل تبدیل کردی‘ سرنگ کی تعمیر میں زبردست مہارت دکھائی‘ ریل نیٹ ورک قائم کئے اور بحری جہاز سازی میں نام کمایا۔ برونل نے گریٹ ویسٹرن ریلوے کا ڈیزائن تیار کیا۔ برونل کی محنت رنگ لائی اوروکٹورین عہد ریلوے کی ترقی کے حوالے سے یادگار بن گیا۔ برونل تن تنہا کئی صورتوں میں صنعتی انقلاب لے آیا۔ یہ برونل ہی تھا جس نے ٹرانس اٹلانٹک شپنگ کے لیے بحری جہازوں کو تیار کیا۔ اس
مزید پڑھیے


مستقبل کا نقشہ: سینٹ امیدواروں کا میرٹ

پیر 15 فروری 2021ء
اشرف شریف
سینیٹ امیدواروں کو دیکھ کر تفصیلی تجزیہ کیا جا سکتا ہے جو اگلے کالم میں پیش خدمت ہو گا، پہلے کچھ دانشورانہ افکار پڑھ لیں پھر آگے بڑھیں گے ۔ ہم جمہوریت پر بہت بحث کرتے ہیں۔ جمہوریت کا یہ مطلب نہیں کہ میری جہالت اور آپ کا علم و فضل تولنے میں برابر ہیں۔ ونسٹن چرچل نے کہا تھا کہ جمہوریت کے خلاف سب سے مضبوط دلیل یہ ہے کہ اوسط درجے کی فہم رکھنے والے ووٹر سے جمہوریت کے متعلق پانچ منٹ تک تبادلہ خیال کیا جائے۔ اگر آپ کسی ایسے جمہوری نظام میں جی رہے ہیں جہاں
مزید پڑھیے


اچھے فیصلے کریں‘نقصان سے بچائیں

هفته 13 فروری 2021ء
اشرف شریف
کسی کو یہ کہنے اور پوچھنے کی ضرورت نہیں کہ’’یہ دھواں سا کہاں سے اٹھتا ہے‘‘ ایکشن ری پلے تھا۔ وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نون لیگی حکومت کے خلاف ایک ریلی لے کر اسلام آباد کی طرف آ رہے تھے۔ پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے آئی جی مشتاق سکھیرا کے ساتھ مل کر اٹک پل کو محاذ بنا دیا۔ اشک آور گیس کے اتنے کارتوس داغے گئے کہ خول کا ڈھیر لگ گیا۔ فضا میں دھواں ہی دھواں بھر گیا۔ تب ہم نے مسلم لیگ نون کی حکومت اور اس کی قیادت کو یاد دلایا کہ
مزید پڑھیے








اہم خبریں