BN

محمد اظہارالحق

روشنی مقدر ہو چکی


موسموں کا الٹ پھیر مقرر کردیا گیا ہے۔ گرما رخصت ہورہا ہے۔ سب کو معلوم ہے آنے والے مہینے سرد، تند ہوائوں کے ہیں۔ جھکڑ چلیں گے۔ درختوں کے پتے گریں گے۔ زرد خشک پتے! زرد خشک پتوں کے ڈھیروں پر چلنے سے کھڑکھڑانے کی آوازیں آئیں گی۔ پھول نہیں کھلیں گے۔ یہ وہ موسم ہیں جب برفانی وسط ایشیا کے باشندے چرم کے موزے پہنتے ہیں اور گھٹنوں کو چھونے والے لمبے جوتے۔ مگر خزاں ہمیشہ نہیں رہتی۔ خلاق عالم نے موسموں کا الٹ پھیر طے کر رکھا ہے تاکہ مخلوق اپنے آپ کو تبدیلی کے لیے تیار رکھے۔ باغوں
منگل 16 اکتوبر 2018ء

جیسی حکومت ویسے عوام‘ جیسے عوام ویسی حکومت

اتوار 14 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
کل تیرہ اکتوبر کا واقعہ ہے۔ اسلام آباد کے ایک مرکزی سیکٹر کا رہائشی علاقہ ہے۔ دونوں طرف مکان ہیں۔ درمیان میں سڑک ہے۔ صبح آٹھ بجے ایک مکان کی گھنٹی بجتی ہے۔ مکین باہر نکلتا ہے۔ پولیس کا اہلکار گیٹ پر کھڑا ہے۔ ’’یہ گاڑیاں ہٹائیے! رُوٹ لگنے لگا ہے۔‘‘ گاڑیاں سڑک پر کھڑی تھیں نہ فٹ پاتھ پر! فٹ پاتھ اور مکان کے درمیان‘ خالی جگہ تھی جو مکان کا حصہ تھی۔ گاڑیاں وہاں پارک تھیں۔ ’’گاڑیاں سڑک پر ہیں نہ فٹ پاتھ پر‘‘۔ آپ کو ان سے کیا مسئلہ ہے؟‘‘ ’’بس حکم ہوا ہے کہ کوئی گاڑی سڑک پر نہ ہو‘‘ ’’گزرنا کس نے
مزید پڑھیے


ایک فقرے کی مار

هفته 13 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق

شہزادہ امریکہ میں سفیر مقرر ہوا تو سفارت کاری کی تاریخ میں تو کوئی معجزہ برپا نہ ہوا مگر خریداری کی دنیا میں انقلاب ضرور آ گیا۔

اٹھائیس برس کا نوجوان جو پائلٹ تھا امریکہ جیسے ملک میں سفیر مقرر ہوا۔ یہ وہ ملک ہے جس میں سفارت کاری کے لیے ان افراد کو تعینات کیا جاتا ہے جن کے سر کے بال اڑ چکے ہوتے ہیں۔ بھویں تک، سفارت کاری کے شعبے میں کام کرکے سفید ہو چکی ہوتی ہیں۔ جن کے بیسیوں سفیروں سے ذاتی تعلقات ہوتے ہیں، مگر آہ! اگر کوئی حکمران اعلیٰ کا بیٹا ہو تو پھر
مزید پڑھیے


ایک فیشن سٹار کا آخری پیغام

جمعرات 11 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
کیوبا سے سبھی واقف ہیں۔ امریکی ریاست فلوریڈا کے جنوب میں واقع ملک، کیوبا، کیریبین جزائر کا حصہ ہے۔ یہاں اور ممالک بھی ہیں جو نسبتاً کم معروف ہیں۔ انہی میں ایک ملک ڈومینیکن ری پبلک ہے۔ ہسپانوی زبان بولنے والا یہ ملک کبھی ہسپانیہ کے قبضے میں رہا، کبھی اپنے پڑوسی ملک ہیٹی کے اور کبھی امریکہ کے! کیرزادہ روڈ۔ ری گوئز 1978ء میں یہیں پیدا ہوئی۔ پہلے ملازمت کرتی رہی۔ اس ملازمت کے دوران اس نے انٹرنیٹ پر اپنا بلاگ آغاز کیا۔ اس میں تازہ ترین فیشن کے حوالے ہوتے تھے۔ ساتھ ہی اس نے بوطیق شروع کر دی۔
مزید پڑھیے


خوشیاں منائو اے اہل پاکستان!

منگل 09 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
شکیب جلالی نے کہا تھا: یہاں سے بارہا گزرا مگر خبر نہ ہوئی کہ زیر سنگ خنک پانیوں کا چشمہ تھا کیا معلوم تھا کہ بہشت صرف چند فرسنگ کے فاصلے پر ہے اے اہل پاکستان! تمہارے درد کے دن ختم ہونے کو ہیں، یہ جو تم اپنے بیٹوں، بھتیجوں، بھانجوں، بیٹیوں کے فراق میں تڑپتے رہتے ہو، یہ جو تم ہفتے میں کئی بار سکائپ پر اور وٹس ایپ پر اور فیس ٹائم پر اور میسنجر پر سمندر پار رہنے والے عزیزوں سے باتیں کر کے جدائی کی پیاس بھڑکاتے رہتے ہو، اب اس کی ضرورت نہیں۔ انہیں کہو واپس آ جائیں، ان کے
مزید پڑھیے


جب باغ چھپروں پر گر پڑتا ہے!

اتوار 07 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
اور اُن دو شخصوں کی مثال! ان میں سے ایک کے دو تاکستان تھے‘ انگوروں سے بھرے ہوئے۔ اردگرد کھجوروں کی باڑ! اور درمیان میں کھیتی! دونوں چمنستان بھر پور پھل دیتے ذرا سی کسر بھی نہیں چھوڑتے تھے۔ یہی نہیں! درمیان میں نہر بھی رواں تھی! پھل اُترا اور خوب اُترا! پھر اس نے دوسرے شخص کو جتایا کہ میرے پاس مال و متاع بھی خوب ہے اور افرادی قوت بھی! پھر وہ اپنے چمنستان میں اٹھلاتا ہوا داخل ہوا۔ زعم میں ! ’’کیسے ممکن ہے کہ اس پر کبھی زوال آئے۔ میں نہیں سمجھتا کہ روز حساب آئے گا! آیا
مزید پڑھیے


ملازم ہیں ہم خاندانی یہاں

هفته 06 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
نوجوان آہستہ آہستہ قدم آگے بڑھا رہا تھا۔ فلمیں یاد آ گئیں جن میں سلطان راہی یا مصطفی قریشی اسی انداز میں چلتے تھے۔ آہستہ آہستہ، گردن اوپر کر کے! صرف بازو آگے پیچھے، متکبرانہ انداز میں ہلانے کی کسر باقی تھی۔ آج لکھنا تو اُس زبردست ’’کامیابی‘‘ پر تھا جو عالمِ اسلام کے مقدس ترین ملک کو حال ہی میں نصیب ہوئی ہے مگر صبح صبح ٹیلی ویژن دیکھ کر یہ نیا سیاپا آڑے آ گیا! سو، سوچا کے قارئین کو اِس بے کنار ’’مسرت‘‘ میں شامل کر لیا جائے۔ نوجوان کا تعلق کسی شاہی خاندان کے ساتھ نہیں، مگر عملاً وہ
مزید پڑھیے


اس سے پہلے کہ چڑیاں چُگ جائیں کھیت

جمعرات 04 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
ریلوے کے وزیر نے اعلان کیا ہے کہ سی پیک معاہدے کے تحت‘ ریلوے منصوبوں کے حجم میں دو ارب ڈالر کی کمی کر دی گئی ہے۔ اب یہ حجم آٹھ ارب سے کم ہو کر چھ ارب رہ گیا ہے۔ اسے چار ارب تک لانے کا پروگرام ہیْ وجہ یہ ہے کہ بقول وزیر ریلوے قرضوں کی بڑھتی ہوئی شرح نقصان دہ ثابت ہو گی! تحریک انصاف کی حکومت جس طرح کچھ دیگر معاملات میں مذبذبین بین ذالک لا الیٰ ہو لا ولا الیٰ فھوولا کی کیفیت کا شکار ہے‘ بالکل اسی طرح سی پیک کے معاملے میں ایک واضح
مزید پڑھیے


کچھ سیاست سے ہٹ کر

منگل 02 اکتوبر 2018ء
محمد اظہارالحق
دادی عالمِ اضطراب میں کبھی اِدھر جاتی کبھی اُدھر! بیرون ملک سے تعطیل پر آئے ہوئے چھ سالہ پوتے کے لیے دادا نے ٹیوٹر لگوا دیا تھا کہ اردو پڑھنے لکھنے کی کچھ مشق ہو جائے۔ ابھی بیس پچیس منٹ مشکل سے ہوئے تھے۔ بچے کا والد بھی وہیں بچے کے پاس بیٹھا تھا۔ مگر دادی کا خیال تھا کہ پوتا تھک گیا ہو گا۔ دادی جان کی خدمت میں عرض کیا کہ بچہ آرے سے پیڑ تو نہیں کاٹ رہا کہ تھک گیا ہے! دادی کا استدلال یہ تھا کہ بچہ تعطیلات گزارنے آیا ہے! بالآخر بیٹھک میں جا کر ٹیوٹر
مزید پڑھیے


جب نیب تھی نہ سوئو،موٹو۔نوٹس

اتوار 30  ستمبر 2018ء
محمد اظہارالحق

میرے محترم اور پرانے دوست کا یہ کہنا سو فیصد درست ہے کہ جب ہم نے ساٹھ اور ستر کی دہائی میں بڑے بڑے کام کیے‘ ڈیم بنائے‘ صنعتوں میں ترقی ہوئی‘ اس وقت نیب تھا نہ سوئو موٹو نوٹس!

لیکن ایک اور شے بھی اُس وقت نہ تھی جو ہم بھول رہے ہیں!

اُس وقت حکمرانوں کی آنکھ میں بُھوک نہ تھی! وہ سرکاری مال کو اپنی ذات اور اپنے خاندان پر خرچ کرنا حرام سمجھتے تھے۔ قائد اعظم سے لے کر عبدالرب نشتر تک۔ لیاقت علی خان سے لے کر چودھری محمد علی تک۔ ایوب خان سے لے کر ذوالفقار
مزید پڑھیے